پشاور کو پولیو اور دوسری موذی بیماریوں سے پاک کریں گے،ڈاکٹرعمران حامدشیخ

اتوار مئی 12:40

پشاور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 مئی2018ء) ڈپٹی کمشنر پشاورڈاکٹر عمران حامد شیخ نے ٹائون ون اور ٹو کے ڈسٹرکٹ اور ٹائون ممبران سے ضلع کونسل ہال میں اہم ملاقات کی جس میں ناظم ٹائون ون زاہد ندیم، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر ٹائون ٹو عرفان علی ، ڈپٹی ڈی ایچ او اختیار علی، این سٹاپ آفیسر ڈاکڑانور جمال، ڈبلیو ایچ او ، یونیسیف کے نمائندگان سمیت دیگر بھی موجود تھے۔

اس موقع پر ڈپٹی کمشنر پشاور نے شرکاء کو شاہین مسلم ٹائون میں بچوں کی فوتگی کی تحقیقات سے آگاہ کیا اور فاتحہ خوانی بھی کی۔انھوں نے بتایا کہ حفاظتی ٹیکے اس سے پہلے بھی بچوں کو لگواچکے ہیں اور دوسرے ملکوں میں بھی یہی ٹیکے استعمال ہو رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ابھی تک دس ارب سے زیادہ پولیو سے بچائو کے قطروں کی خوراک بچوں کو دی جا چکی ہیںاور پاکستان میں ابھی تک ایک کروڑ پچاس لاکھ بچوں کو پولیو سے بچائو کے انجکشن لگے ہیں جبکہ اس سے ریکشن کا کوئی واقعہ رونما نہیں ہوا یعنی پولیو کی ویکسین اور ٹیکے کافی محفوظ ہیں۔

(جاری ہے)

ڈپٹی کمشنر نے واضح کیا کہ پولیو انجکشن مہم کے دوران آٹھ روز میں ایک لاکھ 88 ہزار بچوں کو پولیو سے بچائوکے انجکشن لگائے گئے اور کوئی ریکشن کا واقع رپورٹ نہیں ہواجبکہ روٹین میں بھی پشاور میں بیس ہزار سے زیادہ بچوں کو ہر مہینے یہی ٹیکے لگ رہے ہیں۔ڈپٹی کمشنر پشاور نے صفائی کی ناقص صورتحال کے بارے میں بھی بات کی اور یقین دلایا کہ پیر کے روز سے شاہین مسلم ٹائون اور ملحقہ علاقوں میں صفائی کا کام ترجیحی بنیادوںپر شروع کیا جا ئے گا۔

انھوں نے یقین دلایا کہ انتظامیہ عوامی نمائندگان کے مشوروں اور تعاون سے پشاور کو ماڈل ڈسٹرکٹ بنائے گی اور مشترکہ کاوشوں سے ہم عنقریب پشاور کو پولیو اور دوسری موذی بیماریوں سے پاک کریں گے۔ انھوں نے کہا کہ ہم سب کومل کر پشاور سمیت پاکستان کو پولیو سے پاک کرنا ہے۔

متعلقہ عنوان :