پاکستانی نژاد اطالوی لڑکی ثناء چیمہ قتل کیس کے مزید 2 ملزمان گرفتار

ملزمان اعجاز خضر اور فراز خضر استنبول فرار ہونے کی کوشش کررہے تھے ایف آئی اے نے حراست میں لے لیا

پیر مئی 16:10

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 مئی2018ء) پاکستانی نژاد اطالوی لڑکی ثناء چیمہ کے قتل کیس میں مزید 2 ملزمان نیو اسلام آباد ایئرپورٹ سے حراست میں لے لیے گئے۔ ایئرپورٹ ذرائع کے مطابق ملزمان اعجاز خضر اور فراز خضر استنبول فرار ہونے کی کوشش کررہے تھے جنہیں ایف آئی اے نے حراست میں لے لیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایف آئی اے نے جہلم پولیس سے ملزمان کی حوالگی کے لیے رابطہ کیا ہے۔

(جاری ہے)

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ 18 اپریل کو گجرات کے گاؤں منگووال غربی میں 26 سالہ پاکستانی نڑاد اطالوی شہری ثنائ چیمہ کی موت کی رپورٹس سامنے آئی تھیں، تاہم اہلخانہ نے موت کو طبعی قرار دے کر ان کی تدفین کردی تھی۔بعدازاں سوشل میڈیا اور اطالوی میڈیا پر یہ رپورٹس سامنے آئیں ثناء چیمہ کو قتل کیا گیا ہے جس کے بعد معاملے کی تحقیقات کے بعد قبر کشائی کی گئی اور فرانزک رپورٹ میں تصدیق ہوئی کہ ثنائ چیمہ کو گلا دبا کر قتل کیا گیا۔

پولیس کے مطابق تحقیقات میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ مقتولہ اٹلی میں شادی کرنا چاہتی تھی تاہم اس کے والد اور دیگر اہلخانہ اس کے خلاف تھے۔ پولیس کا کہنا تھا کہ قتل کے شبہ میں مقتولہ کے والد غلام مصطفیٰ، بھائی عدنان مصطفیٰ اور چچا مظہر اقبال زیرحراست ہیں۔