پاکستان پیرامیڈیکل اسٹاف ایسوسی ایشن کے وفد کی میاں مقصوداحمد سے ملاقات

جماعت اسلامی پیرا میڈیکل ایسوسی ایشن کے مسائل کو ہر سطح پر اجاگر کرے گی،میاں مقصود احمد

ہفتہ مئی 21:41

پاکستان پیرامیڈیکل اسٹاف ایسوسی ایشن کے وفد کی میاں مقصوداحمد سے ملاقات
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 مئی2018ء) چیئرمین پاکستان پیرامیڈیکل اسٹاف ایسوسی ایشن پنجاب چوھدری احسان اللہ سدھو کی سربراہی میں وفد نے صدر متحدہ مجلس عمل پنجاب اورامیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد، صوبائی نائب امیر مولانا جاوید قصوری، صوبائی جنرل سیکرٹری بلال قدرت بٹ۔صوبائی میڈیا آرگنائزر فاروق چوہان سے خصوصی دعوت پر تعلیم یافتہ پیرامیڈکس پنجاب کے ساتھ اتائیت کی آڑمیں موجودہ پیش آنے والی مشکلات اور انکے حل پر خصوصی ملاقات کی۔

وفدنے ملاقات میں چیئرمین (پی پی ایم ایس اے ) نے الائیڈ ہیلتھ سائنسز کے تمام شعبہ جات کے تعلیم یافتہ طبقے پر ناانصافیوں پرمبنی ڈھائے جانے والے ظلم کے مختلف طریقوں اور اسکے نتیجہ میں ھونے والے استحصال پر تفصیلی مکمل بریفنگ دی۔

(جاری ہے)

متحدہ مجلس عمل پنجاب کے صدر اور امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدنے خصوصی توجہ دیتے ھوئے تمام معاملات کو پنجاب اسمبلی،، قومی اسمبلی و سینٹ سمیت ہر محاذ پر اپنی جماعت کی جانب سے خصوصی تعاون اور رہبری کا اعلان کرتے ہوئے اپنے صوبائی دفتر کی تمام خدمات دینے کا اعلان کیا۔

وفد میں شامل میاں احمد فاروق، شیخ محمد اشتیاق، طاہراقبال بیگ، شہباز اتفاق خان اور حافظ شہزاد حسین نے اپنے خیالات کا مختلف زاویوں سے اظہار کیا جس کو مدنظر رکھتے ہوئے امیر صوبہ پنجاب میاں مقصود احمد نے حالات کا باریک بینی سے جائزہ لیا اور ہر فورم پرپیرامیڈیکل ایسوسی ایشن کی آواز بننے کا یقین دلایا۔ اجلاس کے اختتام پر میاں مقصود احمد نے پیرامیڈکس پاکستان کو اپنے حقوق کی جنگ کیلئے ایک بامقصد بیانیے ’تعلیم کو عزت دو‘’ تعلیم یافتہ اور غیر تعلیم یافتہ طبقے میں تقریق کرو‘ قانون کا پبلک اور پرائیویٹ سیکٹر دونوں پر مساوی اطلاق‘ جدوجہد کیلئے محنت کرنے کیلئے ایک پلیٹ فارم پر یکجہتی پیدا کرنے کا مشورہ دیا۔

میاں مقصوداحمد نے کہاکہ حکومت کایہ المیہ ہے کہ اس نے دیگر شعبہ جات کی طرح شعبہ صحت کو بھی نظر انداز کررکھاہے۔عوام کو صحت کی بنیادی سہولیات بھی میسر نہیں۔سرکاری ہسپتالوں کی حالت زاراور عوام کے ساتھ ہونے والے نارواسلوک کو دیکھ کر حکمرانوں کی بدترین کارکردگی سامنے آجاتی ہے۔مسلم لیگ(ن)کی حکومت نے عوام کو شدید مایوس کیا ہے۔دوردراز علاقوں میں صحت کی سہولیات کافقدان ہے۔۔غریب عوام کے پاس سکت نہیں کہ وہ بڑے شہروں کارخ کرسکیں۔زندہ رہنے کی کشمکش میںکئی معصوم زندگیاں فوری طبی امداد کی عدم فراہمی کے باعث لقمہ اجل بن جاتی ہیں۔