سعودی عرب،سماجی و روایتی پابندیاں، 51 فیصد لڑکیاں انٹرنیٹ استعمال نہیں کر سکتیں

پیر مئی 10:00

ریاض۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 مئی2018ء) سعودی محکمہ شماریات نے کہا ہے کہ51 فیصد لڑکیوں پر انٹرنیٹ استعمال کی ممانعت کے باعث انٹرنیٹ اور موبائل استعمال کرنے والوں میں لڑکوں کی تعداد زیادہ ہے۔

(جاری ہے)

دارالحکومت ریاض میں مقامی اخبار الوطنی کو دیئے گئے انٹرویو میں سوشل سکالر خاتون نے بتایا کہ مملکت میں لڑکے انٹرنیٹ اور موبائل زیادہ استعمال کرتے ہیں جبکہ لڑکیوں پر سماجی اور روایتی پابندیاں اس قدر ہیں کہ وہ انٹرنیٹ کو آزادی سے استعمال نہیں کر سکتیں۔ یہی وجہ ہے کہ انٹرنیٹ اور موبائل استعمال کرنے والوں میں لڑکیوں کی تعداد کم ہے۔