ملک میں ٹیبل ٹینس کے ٹیلنٹ کی کمی نہیں، نوجوان کھلاڑیوں کو سہولیات فراہم کرنے کی ضرورت ہے،شاہد بلوچ

پیر مئی 13:00

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) پنجاب ٹیبل ٹینس ایسوسی ایشن کے سابق چیئرمین اور صدر پاکستان ٹیبل ٹینس فیڈریشن کے مشیر شاہد بلوچ نے کہا کہ ملک میں ٹیبل ٹینس کے ٹیلنٹ کی کمی نہیں بلکہ نوجوان کھلاڑیوں کو سہولیات فراہم کرنے کی ضرورت ہے۔ گذشتہ روز اے پی پی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے نے کہا کہ کھلاڑیوں کو زیادہ سے زیادہ ٹورنامنٹ کھیلنے کے مواقع فراہم کرنے کی ضرورت ہے جس سے کھلاڑی آگے بڑھ کر ملک و قوم کا نام روشن کر سکتے ہیں۔

شاہد بلوچ نے کہا کہ اس وقت تعلیمی اداروں ٹیبل ٹینس کے زیادہ مقابلے ہورہے ہیں جس سے نیا ٹیلنٹ ابھر کر سامنے آرہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ٹیبل ٹینس فیڈریشن کے صدر خواجہ حسن ودود ملک میں ٹیبل ٹینس کے کھیل کی ترقی کیلئے دن رات کوششوں میں مصروف ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے نے کہا کہ پاکستان ٹیبل ٹینس فیڈریشن کے صدر خواجہ حسن ودود کو اس بات کا ضرور کریڈٹ دوں گا کہ ان کی ذاتی کاوشوں سے گذشتہ ماہ وفاقی دارالحکومت میں ٹیبل ٹینس سپر لیگ کا کامیاب انعقاد ہوا جس میں ملک بھر سے کثیر تعداد میں مرد اور خواتین کھلاڑیوں شرکت کی۔

انہوں نے کہا کہ یہ کرکٹ کے بعد پہلا ایونٹ تھا کہ جس میں کھلاڑیوں کو مالی فائدہ پہنچا اور اس ایونٹ میں ملک بھر سے 8 ٹیموں نے حصہ لیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ٹیبل ٹینس فیڈریشن کے زیراہتمام ماسٹر ٹیبل ٹینس ٹورنامنٹ عید کے بعد پاکستان سپورٹس کمپلیکس میں کھیلا جائے گا جس میں 50 سے زائد مرد اور خواتین کھلاڑی حصہ لیں گے اور ٹورنامنٹ کی تیاریاں عروج پر ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں شاہد بلوچ نے کہا کہ پاکستان ٹیبل ٹینس فیڈریشن اپنے کم وسائل میں رہتے ہوئے پھر بھی مختلف قومی سطح کے ٹورنامنٹس کا انعقاد کرواتی ہے اور کھلاڑیوں کو بیرون ملک ایونٹ میں شرکت کیلئے بھیجتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت سے اپیل کی ہے کہ دیگر کھیلوں کی طرح ٹیبل ٹینس کھیل کی گرانٹ میں اضافہ کرے۔