سوتیلے باپ سے بچانے کے لیے والدہ نے بیٹی کو گونگے بہرے شخص سے بیاہ دیا

سوتیلی بیٹی کی شادی پر باپ نے غصے میں اس کا پاؤں کاٹ دیا

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین ہفتہ جون 15:28

سوتیلے باپ سے بچانے کے لیے والدہ نے بیٹی کو گونگے بہرے شخص سے بیاہ دیا
دیپالپور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 02 جون 2018ء) : سوتیلے باپ کی زیادتی سے بچانے کے لیے والدہ نے اپنی بیٹی کی شادی گونگے بہرے شخص سے کر دی ، سوتیلی بیٹی کی شادی پر باپ نے غصے میں آ کر اس کا پاؤں کاٹ دیا۔ معذور لڑکی جب اپنے گونگے بہرے شوہر کے ساتھ بیاہ کر اس کے گھر گئی تو وہاں سسر نے بھی ظلم و بربریت کی انتہا کر دی۔ سفاک سسر تیز دھار چھُرے سے اپنی بہو کو دھمکاتا تھا۔

ثانیہ نے ایک ویڈیو ریکارڈ کر کے معروف ٹی وی اینکر اقرار الحسن کو بھجوائی جس میں اس نے اپنے اوپر ڈھائے جانے والے ظلم کی کہانی بیان کر دی۔ اس ویڈیو میں ثانیہ نے بتایا کہ میری عمر 22 سال ہے،میں پہلے لاہور میں اپنے والدین کے ساتھ رہتی تھی لیکن میرے والد سوتیلے تھے۔ دس سال کی عمر میں میرے والد مجھ سے بہت غط سلوک کرتے تھے،ابھی تک بھی ایسا ہی ہوتا ہے کہ میرے سسرال میں آ کر مجھے مارتے ہیں،اور میرے ساتھ زبردستی کرتے ہیں، اس ویڈیو میں ثانیہ نے بتایا کہ میرے سسر بھی میرے ساتھ زبردستی کرتے اور میری عزت کو اُچھالتے ہیں، جس شخص کےساتھ میری شادی ہوئی ہے وہ شخص گونگا بہرہ ہے،اس ویڈیو میں ثانیہ نے اقرار الحسن نے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ مجھے یہاں سے نکال لیں کیونکہ میں یہاں رہنا نہیں چاہتی۔

(جاری ہے)

ثانیہ نے خفیہ کیمرے سے اپنے سفاک اور جنسی درندگی کرنے والے سسر کی کچھ ویڈیو ریکارڈ بھی کیں، ثانیہ کے گھر میں موجود ایک خاتون نے بھی بتایا کہ مجھے بھی تین سال سے زیادتی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ جس کے بعد اقرار الحسن نے اپنی ٹیم کے ہمراہ ثانیہ کے سسرال پر دھاوا بولا، ثانیہ کے سسر نے سب کے سامنے اسے جھوٹا اور خود کو سچا ثابت کرنے کی کوشش کی ۔ سفاک سسر کی دوسری بہو نے بھی اس کی گندی حرکتوں کی گواہی دی جس کے بعد ثانیہ کو اس کے سفاک سسر سے بازیاب کروایا۔ اس تمام تر کارروائی کی ویڈیو آپ بھی ملاحظہ کیجئیے:

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

متعلقہ عنوان :