ایتھیوپیا کی جھیل میں مگرمچھ نے حملہ کرکے پادری کوہلاک کردیا،لاش برآمد

پادری لوگوں کو بپتسمہ دے رہے تھے،مقامی افرادنے بہت کوشش کی لیکن مگرمچھ کے منہ سے پادری کو نہ چھڑا سکے

بدھ جون 13:36

ادیس ابابا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) ایتھوپیا میں ایک مگرمچھ ایک پادری کو اس وقت پکڑ کر جھیل میں لے گیا جب وہ لوگوں کو بپتسمہ دے رہے تھے۔میڈیارپورٹس کے مطابق پولیس اور مقامی لوگوں نے کہا ہے کہ مرکب تبائیعا ضلع میں پروٹیسٹنٹ پاسٹر ایشیٹے 80 لوگوں کے اجتماع کو ابایا جھیل میں بیپتسمہ دے رہے تھے کہ ایک مگرمچھ نے ان پر حملہ کر دیا۔

(جاری ہے)

مقامی لوگوں کا کہنا تھا جب پادری ایک شخص کو بپتسمہ دے چکے تو مگرمچھ نے چھلانگ لگا کر پادری کو اپنے طاقتور جبڑوں میں پھنسا لیا اور گہرے پانی میں لے گیا۔ایک مقامی شخص کیتما کیرو نے بتایا کہ مقامی لوگوں اور مچھیروں نے پادری کو مگرمچھ کے چنگل سے چھڑانے کی سرتوڑ کوشش کی لیکن وہ اس میں کامیاب نہ ہوسکے۔ مقامی لوگ پادری کی جان بچانے میں کامیاب تو نہیں ہوئے البتہ وہ ان کی لاش کو مگرمچھ سے چھڑا لائے۔ایتھوپیا کی جھیل ابایا گیارہ سو کلومیٹر طویل ہے اور اسے مگر مچھوں کی بڑی آماجگاہ تصور کیا جاتا ہے۔

متعلقہ عنوان :