بیت المقدس کو مقبوضہ بیت المقدس کہنے پر اسرائیل ناراض ہوگیا

مقبوضہ فلسطین کے الفاظ برطانوی شہزادہ ولیم کے دورے کے پروگرام میں بھی شامل ،ْدورے کا آغاز 25جون سے ہوگا

جمعرات جون 17:00

مقبوضہ بیت المقدس (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) بیت المقدس کو مقبوضہ بیت المقدس کہنے پر اسرائیل ناراض ہوگیا ، مقبوضہ فلسطین کے الفاظ برطانوی شہزادہ ولیم کے دورے کے پروگرام میں بھی شامل ہیں۔

(جاری ہے)

اسرائیلی میڈیا کے مطابق بیت المقدس کو مقبوضہ بیت المقدس کہنے پر اسرائیل ناراض ہوگیا ہے اسرائیل کے وزیر زیو ایلکن نے اس پر اپنی ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے اپنے فیس بک پیج پر لکھا کہ افسوس کی بات ہے کہ شہزادہ کے دورے کے موقع پر سیاست کا انتخاب کیا گیا میں امید کرتا ہوں کہ پرنس ولیم کا اسٹاف ان الفاظ کو نکال دے گا ۔

انہوں نے کہا کہ بیت المقدس 3ہزار سال سے ہمار ا ہے ۔واضح رہے کہ مقبوضہ فلسطین کے الفاظ شہزادہ ولیم کے دورے کے پروگرام میں شامل ہیں اور برطانوی شہزادے کے دورے کا شیڈول کینگسٹن پیلس سے جاری کردیا گیا ہے۔پروگرام کے مطابق برطانوی شہزادہ ولیم مسجد اقصیٰ اور مغربی دیوار براق بھی جائیں گے ،شہزادے کو مقبوضہ فلسطین میں کوہ زیتون سے بریفنگ بھی دی جائے گی شہزادہ ولیم کے دورے میں سینٹ جون چرچ جانا بھی شامل ہے۔واضح رہے کہ پرنس ولیم کے دورے کا آغاز 25جون سے ہوگا ۔

متعلقہ عنوان :