پنجاب اناج کا گھر ہے ، زرعی معیشت کی ترقی کیلئے ہر ممکن اقدامات کی جائیں، سردار تنویر الیاس

کاشتکاروں کوان کی محنت کا صحیح صلہ دیئے بغیر زرعی ترقی ممکن نہیں، مڈل مین کا عمل دخل کم سے کم کیا جائے موسمی تبدیلی کے باعث مستقبل میں فوڈ سیکورٹی کے مسائل سے نمٹنے کیلئے فوری توجہ کی ضرورت ہے،پنجاب کے نگراں وزیر زراعت کا اجلاس سے خطاب

جمعرات جون 20:50

راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) پنجاب کے نگراں وزیر زراعت،خوراک، لائیو سٹاک و ڈیری ڈیویلپمنٹ ، ٹرانسپورٹ ، منصوبہ بندی و ترقیات سردار تنویر الیاس خان نے ہدایت کی ہے کہ گندم کی خریداری ، قیمتوں کے تعین اور زرعی معیشت کے استحکام و ترقی کے لئے ایسے جامع اقدامات کئے جائیں جن سے کاشتکاروں کو زیادہ سے زیادہ سہولیات اور مواقع حاصل ہو سکیں اور مڈل مین کا عمل دخل کم سے کم کرکے خون پسینہ ایک کرکے زرعی پیداوار میں اضافے کا باعث بننے والے کسانوں کو ان کی محنت کا صحیح اجر مل سکے۔

یہ ہدایات انہوںنے محکمہ زراعت کے افسران کے ایک اجلاس کے دوران جاری کیے ۔ سردار تنویر الیاس خان نے کہا کہ پنجا ب اناج کا گھر ہے اور صوبے کے کاشتکار اپنی محنت شاقہ سے فصلیںاگا کر ملکی سطح پر زرعی اجناس کی ضروریات پوری کرتے ہیں اور نامساعد حالات کے باوجود قومی ترقی میں فعال کردار ادا کر رہے ہیں۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ حکومت کا یہ فرض اولین ہے کہ کاشتکاروںکے لئے ہر ممکن سہولیات فراہم کی جائیں انہیں سستے بیج ، کھاد ، کیڑے مار ادویات اور زرعی قرضے فراہم کئے جائیں اور زرعی ٹیکنالوجی سے کاشتکاروں کوہم آہنگ کرنے کے لئے جامع حکمت عملی وضع کی جائے۔

صوبائی وزیر خوراک و زراعت نے کہاکہ موسمی تبدیلی کے اثرات کے باعث مستقبل میں فوڈ سیکورٹی کے مسائل سے نمٹنے کے لئے فوری توجہ کی ضرورت ہے اورزرعی سائنسدان اس سلسلے میں ایسی ٹیکنالوجی متعارف کرائیں جن سے کم سے کم پانی کے باوجود زیادہ زرعی پیداوار حاصل ہوسکے اور زمین کی پیداواری صلاحیت میں بھی اضافہ ممکن ہو ۔ انہوں نے کہا کہ زرعی خوشحالی کے بغیر ملکی ترقی کا حصول ممکن نہیں اور یہ اسی صورت ممکن ہے جب کاشتکاروںکے مسائل حل ہوں اور انہیں ان کی محنت کا مکمل صلہ مل سکے۔

متعلقہ عنوان :