پشاورکے رہائشی خورشید کی چیف جسٹس اورنگران حکومت سے والداوربھائی کے قاتلوں کوسخت سزاداورانکی ضمانت منظورنہ کرنے کی اپیل

سال قبل انکے ساتھ گھریلوناچاقی پرتنازعہ شروع ہوااس دوران2014 میں انہوںنے میرے بھائی کوارشدخان کوقتل کردیا ، ملزمان کی ضمانت نہ منظور کی جائے ، حکومت سے اپیل

منگل جون 21:58

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) بدھوثمرباغ رحمان آبادپشاورکے رہائشی نے چیف جسٹس آف پاکستان اورنگران حکومت سے والداوربھائی کے قاتلوں کوسخت سزاداورانکی ضمانت منظورنہ کرنے کی اپیل کی ہے ۔

(جاری ہے)

پشاورپریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے خورشیدولدمسلم خان الزام لگایاکہ ان کے مخالفین رشمین جس نے اب نعمت اللہ کے نام سے دوسراشناختی کارڈبنارکھاہے اسی طرح الطاف ہے جنہو ں نے اپنانام آفتاب رکھاہے مذکورہ دونوں افرادسے ہماری رشتہ داری بھی ہے 6سال قبل انکے ساتھ گھریلوناچاقی پرتنازعہ شروع ہوااس دوران2014 میں انہوںنے میرے بھائی کوارشدخان کوقتل کردیاجس کے بعدپولیس نے ان دونوں کوگرفتارکرلیاتاہم عدالت نے ان محمددانش کوضمانت پررہاکردیاجس کے انہوںنے حالیہ27رمضان کو ہم پردوبارہ قاتلانہ حملہ کیااورمیرے والدکوقتل کردیااورخودمحفوظ رہا۔

انہوںنے کہاکہ واردات کے بعدملزم فرارہونے میں کامیاب ہوگیا،واقعہ کی ایف آئی آرتھانہ پہاڑی پورہ میں درج ہے خورشیدنے چیف جسٹس آف پاکستان اورنگران حکومت سے ملزمان کوسخت سزادینے اورانکی ضمانت منظورنہ کرنے جبکہ انہیں تحفظ فراہم کرنے کی اپیل کی ۔