امریکا، پاکستان کو اختلافات پر ایمانداری کا مظاہرہ کرنا چاہیے، سینیٹربوب کیسے

امریکا اور پاکستان بہت اچھے دوست تھے تاہم گزشتہ چند سالوں میں یہ تعلقات سردگی کا شکار ہوگئے ،گفتگو

جمعہ جنوری 15:04

امریکا، پاکستان کو اختلافات پر ایمانداری کا مظاہرہ کرنا چاہیے، سینیٹربوب ..
واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 جنوری2019ء) امریکی سینیٹ کے سینئر رکن بوب کیسے نے امریکا اور پاکستان کے تعلقات میں بہتری کی ضرورت پر رائے دیتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کو اختلافات پر ایمانداری کا مظاہرہ کرنا چاہیے،غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق انہوں نے یہ بیان پاک امریکا سیاسی ایکشن کمیٹی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے دیا،پاک امریکا سیاسی ایکشن کمیٹی کی تقریب میں ڈیموکریٹک پارٹی کے یہ دونوں سینیئر اراکین سمیت 20 قانون سازوں نے شرکت کی تھی۔

سینیٹ کی کمیٹی برائے خارجی امور سینیٹر جین شاہین کا کہنا تھا کہ تاریخ بتاتی ہے کہ امریکا اور پاکستان بہت اچھے دوست تھے تاہم گزشتہ چند سالوں میں یہ تعلقات سردگی کا شکار ہوگئے ۔سینیٹر شاہین جو امریکا کی پاکستان کے لیے پالیسیز میں اہم کردار ادا کرتے ہیں، نے تعلقات کو بہتر بنانے کی ضرورت کا اعتراف کیا اور پاکستانی نڑاد امریکی کمیونٹی سے امریکی سیاسی میں شامل ہوکر اپنا کردار ادا کرنے پر زور دیا۔

(جاری ہے)

ان کا کہنا تھا کہ مجھے لگتا ہے کہ یہ انتہائی ضروری ہے کہ ہم اپنے تعلقات کو صحیح سمت میں لے جانے کا راستہ تلاش کریں تاکہ ہم ماضی کی طرح دوبارہ مضبوط اتحادی بن سکیں۔ان کا کہنا تھا کہ دنیا میں کوئی ایسی جگہ نہیں جہاں دہشت گردی یا دہشت گردوں کے حملوں سے اتنا نقصان نہیں ہوا ہو جتنا پاکستان کو ہوا۔امریکہ کی پاکستان سے ناراضگی کی وجہ بتاتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کبھی کبھی سب ٹھیک ہوتا ہے، کبھی کبھی ہم معلومات کا صحیح طرح تبادلہ نہیں کرتے اور کبھی کبھی یہ خراب ہوجاتا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ ہر صدر کو اختیار ہے کہ وہ باہمی تعلقات پر سوالات کرے، تاہم مجھے لگتا ہے کہ ہمیں دہشت گردوں کو شکست دینے اور دہشت گردی کے واقعات سے نمٹنے کے لیے مل کر کام کرنے کی سخت ضرورت ہے۔