دس بچوں کی ماں نے شوہر کو قتل کر دیا

خاتون نے اپنے عاشق اور شوہر کے بہترین دوست کے ساتھ مل کر اپنے ہی بچوں کے باپ کو قتل کرنے کی وجہ بھی بتا دی

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان پیر ستمبر 14:38

دس بچوں کی ماں نے شوہر کو قتل کر دیا
لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 16 ستمبر 2019ء) : بھینس کالونی میں شہری کے قتل کا معاملہ حل ہو گیا ہے۔دس بچوں کی ماں ہی شوہر کی قاتل نکلی۔خاتون نے اپنے عاشق اور شوہر کے بہترین دوست کے ساتھ مل کر اپنے ہی بچوں کے باپ کو قتل کرنے کی وجہ بھی بتا دی،اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ 8 ستمبر کو بھینس کالونی گولیاں لگی تشدد زدہ لاش ملنے کا معمہ حل ہو گیا ہے۔

لاشکی شناخت علی شیر کے نام سے ہوئی ہے۔مقتول کے قاتل اس کی بیوی اور اسکا عاشق نکلے۔پولیس نے قتل میں ملوث مقتول کی بیوی شہناز اور اس کے آشنا فیاض کو گرفتار کر لیا۔مقتول کی بیوی نے پولیس کو بیان دیا ہے کہ اس کا شوہر اس کو مارتا پیٹتا تھا۔فیاض نامی لڑکے سے دوستی ہوئی تو اپنے شوہر کو راستے سے ہٹانے کے لیے آشنا کے ساتھ مل کر قتل کرنے کا منصوبہ بنایا۔

(جاری ہے)

علی شیر اور فیاض ایک محلے کے دوست بھی تھے۔ملزم فیاض نے بھینس کالونی گلی نمبر 12 سے آگے جنگل میں لے جا کر مقتول کو قتل کیا۔ملزمان نے اعتراف جرم بھی کر لیا ہے۔ملزم فیاض نے مقتول کو چار گولیاں مار کر قتل کیا۔پولیس نے دونوں ملزمان کو گرفتار کر کے اسلحہ بھی برآمد کر لیا۔واضح رہے اس سے قبل بھی کئی ایسا واقعات پیش آ چکے ہیں۔ پاکپتن میں بیوی نے آشنا سے مل کر شوہر کو قتل کرکے نعش نہر میں پھنیک دی تھی ۔

محلہ ٹاہلی والا پاکپتن کے محمد عمران نے چک کمہاریوالا کی مسرت بی بی دختر رحمت ؑلی سے گیارہ سال قبل شادی کی اور دونوں علیحدہ رہنے لگے ۔ مسرت بی بی نے غلام مرتضی سے ناجائز مراسم قائم کرلئے پتہ چلنے پر شوہر نے کئی بار اس کو روکا۔ جس پر مسرت بی بی اور اس کے عاشق غلام مرتضی نے محمد عمران کو قتل کرکے لاش راکھ پل کے قریب پاکپتن نہر میں پھینک دی۔