Live Updates

شہزادہ چارلس کے بعد ملکہ برطانیہ کو کورونا وائرس ہو نے کا خدشہ

ممکن ہے کہ شہزداہ چارلس نے مہلک وائرس ملکہ میں منتقل کر دیا ہو، ڈاکٹروں نے خبردار کر دیا

Khurram Aniq خُرم انیق جمعرات مارچ 11:45

شہزادہ چارلس کے بعد ملکہ برطانیہ کو کورونا وائرس ہو نے کا خدشہ
برطانیہ (اردوپوائنٹ تازہ ترین اخبار-26مارچ2020ء) گزشتہ روزبرطانیہ کے شہزادہ چارلس میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی تھی۔تفصیلات کے مطابق پرنس آف ویلز چارلس کا کورونا وائرس کا ٹیسٹ کیا گیا تھا جس کی رپورٹ کل آ ئی ،برطانوی میڈیا کے مطابق شہزادہ چارلس کا کورونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آیا تاہم وہ صحت مند ہیں۔حالیہ ہفتوں کے دوران اپنے عوامی کردار میں ان کی زیادہ مصروفیت کی وجہ سے شہزادہ کو یہ وائرس کس کے ہاتھ سے لگا اس کا پتہ لگانا ممکن نہیں ہے۔

اسی دوران ڈاکٹروں کی جانب سے خطرے کا اظہار کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ ممکن ہے کہ شہزادہ چارلس نے کورونا وائرس ملکہ برطانیہ کو منتقل کر دیا ہو، چونکہ یہ وائرس ایک شخص سے دوسرے شخص میںمنتقل ہوتا ہے، اس لئے اس بات کے واضح امکانات ہیں کہ ملکہ برطانیہ میں بھی کورونا وائرس منتقل کر دیا گیا ہو۔

(جاری ہے)

تاہم اس سے قبل شاہی خاندان کے ایک ملازم میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی جس کا نام اور شناخت ظاہر نہیں کی گئی تھی۔

شہزاد چارلس کی اہلیہ کمیلا پارکر میں کورونا وائرس نہیں پایا گیا۔بتایا گیا ہے کہ برطانیہ کے مستقبل کے بادشاہ شہزادہ چارلس نے دو ہفتوں سے خود کو الگ تھلگ رکھا ہوا تھا۔کلیرنس ہاؤس کے ترجمان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ شہزادہ چارلس میں کورونا کی علامات تھیں۔لیکن بظاہر وہ صحتمند ہیں۔کچھ دنوں سے معمول کے مطابق گھر سے کام کر رہےتھے۔

ملکہ برطانیہ اور ان کے جانشین بیٹے نے خود کو انتظامیہ سرگرمیوں سے محدود کرلیا ہے جس کے بعد شہزادہ ولیم کو عارضی طور پر بادشاہ بنائے جانے کا امکان ہے۔شاہی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اگر ملکہ برطانیہ ان کے جانشین کی جانب سے خود کو قرنطینہ میں بند کرنے کا اعلان کیا جاتا ہے تو پھر شہزادہ ولیم بادشاہت سنبھالیں گے۔خیال رہے کہ دنیا بھر کی طرح برطانیہ بھی کورونا وائرس کی لپیٹ میں ہے، جزوی لاک ڈائون سے ریستوران، سینما گھر، سیاحتی مقامات بند کئے جا چکے ہیں، لندن ٹرانسپورٹ اور ایئرپورٹس سنسان ہو گئے ہیں۔ذرائع ابلاغ کے مطابق حکومت برطانیہ نے کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے 350 بلین پائونڈز کا اعلان کیا ہے، ہسپتالوں میں ایمرجنسی آپریشن اور مریضوں کو دیکھا جائے گا۔۔
کرونا وائرس کی تباہ کاریاں سے متعلق تازہ ترین معلومات