امریکی کانگریس پر حملے کا معاملہ، امریکا میں سیاسی حالات مزید کشیدہ ہوگئے

ڈونلڈ ٹرمپ کے کئی ساتھی بھی واشنگٹن میں پیش آئے واقعات کے بعد سخت نالاں، امریکی صدر کو عہدے سے فوری ہٹانے پر غور

muhammad ali محمد علی جمعرات جنوری 20:14

امریکی کانگریس پر حملے کا معاملہ، امریکا میں سیاسی حالات مزید کشیدہ ..
واشنگٹن (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 07  جنوری 2021ء) امریکی کانگریس پر حملے کا معاملہ، امریکا میں سیاسی حالات مزید کشیدہ ہوگئے، ڈونلڈ ٹرمپ کے کئی ساتھی بھی واشنگٹن میں پیش آئے واقعات کے بعد سخت نالاں، امریکی صدر کو عہدے سے فوری ہٹانے پر غور۔ تفصیلات کے مطابق امریکی دارالحکومت واشنگٹن میں کانگریس کی عمارت پر ڈونلڈ ٹرمپ کے ہزاروں حامیوں کی جانب سے دھاوا بولے جانے کے بعد امریکی صدر کو اپنی جماعت کے اندر بغاوت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق ناراض ریپبلکن رہنماوں نے ڈونلڈ ٹرمپ کو ہٹانے کا مطالبہ کیا ہے۔ واشنگٹن میں پیش آئے واقعات اور ان کی حمایت کرنے پر 25 ویں آئینی ترمیم فعال کر کے ڈونلڈ ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے پر غور کیا جا رہا ہے۔

(جاری ہے)

بتایا گیا ہے کی امریکی صدر کو فوری عہدے سے ہٹانے کیلئے 25 ویں آئینی ترمیم کا استعمال کیا جا سکتا ہے۔ اگر امریکی کابینہ اور نائب صدر بذریعہ ووٹنگ اپنے صدر کو نااہل قرار دے دیں تو، اس صورت میں امریکی صدر کو فوری ان کے عہدے سے ہٹا دیا جائے گا۔

صدر کو عہدے سے ہٹانے کے بعد نائب صدر وقتی طور پر ملک کی قیادت سنبھال لیتے ہیں۔ یہاں واضح رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے عہدے کی معیاد ختم ہونے میں ابھی 13 روز باقی ہیں، تاہم کانگریس کی عمارت پر ہزاروں افراد کی جانب سے دھاوا بولے جانے کے بعد امریکا کے اندر لوگ خدشے کا اظہار کر رہے ہیں کہ کہیں ملک خانہ جنگی کا شکار نہ ہو جائے، اس لیے ڈونلڈ ٹرمپ کو مزید ملک کا صدر نہ رہنے دیا جائے۔