کرپشن الزامات پر نیب کے ڈپٹی ڈائریکٹر کاشف ممتاز گوندل ملازمت سے برطرف کر دیا، چیئر مین نیب

ادارے کے اندرتطہیر کا عمل جاری مزید درجنوں کرپٹ افسران کے مقدمات فائنل

پیر اپریل 20:25

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ پیر اپریل ء)چیئر مین نیب جسٹس جاوید اقبال نے کرپشن میں ملوث ڈپٹی ڈائریکٹر کاشف ممتاز گوندل کو ملازمت سے برطرف کر دیا ہے اور اعلیٰ پیمانے پر تادیی کارروائی کرنے کی ہدایت بھی کر دی ہے۔ چیئر مین یب نے عہدہ سنبھالنے کے بعد نیب کے اندر تطہیر کا عمل شروع کیا تھا اور درجنوں افسران کیخلاف کرپشن الزامات کے تحت کارروائی جاری ہے۔

ڈپٹی ڈائریکٹر کاشف ممتاز گوندل پر الزام تھا کہ وہ اربوں سے سکینڈل میں ملوث قومی مجرموں کے ساتھ ساز باز کر کے دولت کمانے میں مصروف ہے۔ الزامات سامنے آنے کے بعد چیئر ین نیب نے مجرم کاشف ممتاز گوندل کو صفائیکا موقع بھی دیا اور ایک کمیٹی تشکیل دی جس نے کاشف ممتاز کیخلاف تحقیقات شروع کیں۔

(جاری ہے)

کاشف ممتاز گوندل نیب میں کرپٹ ترین افسر کے طور پر مشہور تھا اور قومی دولت لونٹے والے کے ساتھ قریبی تعلقات قائم کر رکھے تھے اور نیب کے ادارہ کو نقصان بھی پہنچا رہا تھا۔

کاشف ممتاز گوندل پر الزام تھا کہ وہ ہاؤسنگ سوسائٹی مالکان سے بھی مک مکا کر کے کروڑوں روپے کما چکا ہے جبکہ اپنے غیر قانونی اثاثے بھی بنا چکا ہے ۔ چیئر مین نیب نے دستاویزاتی شواہد کے نتیجہ میں کاشف ممتاز گوندل کو عہدہ سے برطرف کر نے کے احکامات جاری کئے ہیں اور نیب کے اندر موجودہ کرپٹ مافیا کو واضح پیغام بھی دے دیا ہے۔ نیب ذرائع نے بتایا ہے کہ آئندہ دنوں میں نیب کے مزید اعلیٰ افسران کو بھی فارغ کر دیا جائے گا۔ ان افسران پر بھی الزام ہے کہ انہوں نے سرکاری عہدوں کا ناجائز فائدہ اٹھا کر ہاؤسنگ سوسائٹی سے پلاٹ حاصل کئے ہیں ۔ آئندہ چند ہفتوں میں ایک درجن سے زائد نیب کے کرپٹ افسران کو نکالا جائے گا جن کے خلاف انکوائریاں پہلے بھی مکمل ہو چکی ہیں۔۔

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments