8 Number Ka Juta

آٹھ نمبر کا جوتا

جوتوں کی دوکان میں داخل ہو کر ایک شخص نے کہا۔ ”مجھے ایسا جوتا چاہیے جو میرے پیروں میں ٹھیک نہ آسکے۔ “ ”یعنی آپ کو کھلا جوتا چاہیے۔ “ دکاندار نے گاہک کے اطمینان کے غرض سے وضاحت چاہی۔ ”نہیں ! میرا مطلب یہ ہے کہ میرے پیر کا سائز نو ہے لیکن مجھے آٹھ نمبر کا جوتا چاہیے۔ “ گاہک نے کہا۔ دکاندار حیرت سے بولا۔ ”اس قدر تنگ جوتا تو آپ کے پاؤں میں تکلیف دے گا جناب!“ گاہک ٹھنڈی آہ بھرتے ہوئے بولا۔ ”یہی تو میں چاہتا ہوں عملی زندگی میں سارا دن بیسوں مصائب سے واسطہ رہتاہے۔ مجھے مسرت کے چند لمحے صرف اس وقت ملتے ہیں جب میں اپنے جوتے اتارتاہوں ۔ صحیح سائز کے جوتے اتارتے ہوئے مجھے ذرا سا لطف نہیں آتا۔ “

Your Thoughts and Comments