8 Number Ka Juta - Joke No. 1482

آٹھ نمبر کا جوتا - لطیفہ نمبر 1482

جوتوں کی دوکان میں داخل ہو کر ایک شخص نے کہا۔ ”مجھے ایسا جوتا چاہیے جو میرے پیروں میں ٹھیک نہ آسکے۔ “ ”یعنی آپ کو کھلا جوتا چاہیے۔ “ دکاندار نے گاہک کے اطمینان کے غرض سے وضاحت چاہی۔ ”نہیں ! میرا مطلب یہ ہے کہ میرے پیر کا سائز نو ہے لیکن مجھے آٹھ نمبر کا جوتا چاہیے۔ “ گاہک نے کہا۔ دکاندار حیرت سے بولا۔ ”اس قدر تنگ جوتا تو آپ کے پاؤں میں تکلیف دے گا جناب!“ گاہک ٹھنڈی آہ بھرتے ہوئے بولا۔ ”یہی تو میں چاہتا ہوں عملی زندگی میں سارا دن بیسوں مصائب سے واسطہ رہتاہے۔ مجھے مسرت کے چند لمحے صرف اس وقت ملتے ہیں جب میں اپنے جوتے اتارتاہوں ۔ صحیح سائز کے جوتے اتارتے ہوئے مجھے ذرا سا لطف نہیں آتا۔ “

مزید لطیفے

گاجریں

gajaren

کیچڑ اور مٹی

keechar aur mitti

تشویش

tashweesh

سمندر میں طوفان

samandar mein toofan

فلسفی

falsafi

دس سالہ بچہ

Das sala bacha

ایک سکھ

Aik sikh

فینسی شو

Fancy Show

سکول ٹیچر

School teacher

ایک جہاز کے ڈوبنے کا خطرہ

aik jahez ke doobne ka khatra

ماہر نفسیات

Mahir e Nafsiyat

مالک مکان

maalik makaan

Your Thoughts and Comments