Phateechar Car - Joke No. 1535

پھٹیچر کار - لطیفہ نمبر 1535

ایک دوپہر کو ایک پرانی پھٹیچر کارنئی دہلی کے ایک ریستوران کے سامنے آکر رکی۔ اس زنگ آلود کار کی چھت کا کپڑا تار تار تھا اور انجن سے دھوئیں کے بادل اٹھ رہے ۔ کار چلانے والا اتر کر قریب کھڑے ہوئے ایک آدمی سے کہنے لگا۔ بھائی ذرا کار کا دھیان رکھنا۔ میں ابھی ٹیلیفون کر کے واپس آیا۔ اس آدمی نے حامی بھرلی جب کار چلانے والا ٹیلیفون کر کے واپس آیا تو اس آدمی نے دس روپے طلب کیے۔ کار چلانے والے نے حیران ہو کر کہا۔ دس روپے یہ تو سراسر زیادتی ہے۔ میں نے تو دس منٹ بھی نہیں لگائے۔ اس آدمی نے جواب دیا۔ جناب میں وقت کی بات نہیں کر رہا ہوں۔ میں اس وقت خفت کا معاوضہ طلب کر رہا ہوں۔ جو مجھے اس کار کے پاس کھڑے رہنے سے ہوئی۔ سب لوگ یہی سمجھ رہے تھے کہ یہ کاری میری ہے۔

مزید لطیفے

استاد شاگرد سے

ustaad shagird se

ایک صاحب

Aik sahib

انسپکٹر صاحب

inspector sahab

تازہ دم

taza dam

کلاس میں دو لڑکے

classe mein do larke

بیٹا ماں سے

Beta Maa Se

دفن

Dafan

آہ، سردار جی

aah, sardar jee

نرس

nurse

پچاس ساٹھ مرتبہ شیو کرتے ہیں؟

pachaas saath martaba shave karte hain?

پیریڈ

Period

دودھ

Doodh

Your Thoughts and Comments