Sheikh Saadi Ki Baatain - Article No. 799

شیخ سعدی کی باتیں

ایک حکیم سے کسی نے پوچھا کہ سخاوت اور بہادری میں کون سی چیز بہتر ہے۔ اس حکیم نے جواب دیا۔

منگل مئی

Sheikh Saadi Ki Baatain
عالِم اور وزیر:
مصر میں دو امیر زادے رہتے تھے۔ ایک نے علم سیکھا دوسرے نے مال جمع کیا۔ پہلا بڑا عالم بن گیا دوسرا مصر کا وزیر بن گیا اور عالم کو حقارت کی نظر سے دیکھنے لگا۔ اس نے کہا کہ میں نے حکومت حاصل کر لی اور تو حقیر فقرہی رہا۔
عالم نے جواب دیا کہ اے بھائی! اللہ تعالیٰ کی نعمت کا شکر مجھے ادا کرنا چاہیے کہ اس نے مجھے پیغمبروں کا ورثہ یعنی علم عطا کیا۔

(جاری ہے)

تجھے فرعون وہامان کی میراث یعنی مال ملا، یعنی مصر کی حکومت۔
سخاوت اور بہادری
ایک حکیم سے کسی نے پوچھا کہ سخاوت اور بہادری میں کون سی چیز بہتر ہے۔

اس حکیم نے جواب دیا۔” جس میں سخاوت ہے اس کو بہادر کی ضرورت نہیں ہے۔“
بہرام گور کی قبر پر لکھا ہوا ہے کہ سخاوت کا ہاتھ طاقت ور بازو سے بہتر ہے۔ حاتم طائی نہیں رہا لیکن اس کا نام ہمیشہ نیکی میں مشہور رہے گا۔ مال کی زکواة نکالتا رہ ، کیوں کہ مالی انگور کے بے کار شاخیں کاٹ پھینکتا ہے تو انگور زیادہ آتا ہے۔

مزید متفرق مضامین

Kitab Behtaren Insaani Dost

کتاب انسان کی بہترین دوست

Kitab Behtaren Insaani Dost

Tees Mar Khan

تیس مار خان

Tees Mar Khan

Mohsin

میرا محسن

Mohsin

Mazaq Ka Pachtawa

مذاق کا پچھتاوا

Mazaq Ka Pachtawa

Polo Ka Khail

پولو کا کھیل

Polo Ka Khail

Waqt Ki Pitai

وقت کی پٹائی

Waqt Ki Pitai

Achi Taleem O Tarbiyat Bohat Zaroori Hai

اچھی تعلیم وتربیت بہت ضروری ہے

Achi Taleem O Tarbiyat Bohat Zaroori Hai

Bhayya Or Behna

بھیا اوربہنا

Bhayya Or Behna

Saneha Public Army Shool Peshawar Ke Chaar Saal

سانحہ پبلک آرمی سکول پشاور کے چار سال

Saneha Public Army Shool Peshawar Ke Chaar Saal

Akhri Qadam

آخری قدم

Akhri Qadam

Darya Par Jana Hai

دریا پار جانا ہے

Darya Par Jana Hai

Bhalu Ki Wapsi

بھالو کی واپسی

Bhalu Ki Wapsi

Your Thoughts and Comments