ٹیکس فری بجٹ میں سیلز ٹیکس سنگل ڈیجٹ ،ود ہولڈنگ ٹیکس کے خاتمہ کے اعلان کیا جائے ‘شہباز اسلم

ود ہولڈنگ ٹیکس کاروباری سرگرمیوں میں رکاوٹ ہے تاجر برادری متفقہ طور پر اس ٹیکس کے خلاف ہے ‘عدنان بٹ نقد رقوم بینکوں سے باہر رکھنے کے رجحان میں اضافہ ودہولڈنگ ٹیکس کے مضر اثرات ہیں ‘ فیروز پور روڈ انڈسٹریل اسٹیٹس

منگل اپریل 15:15

ٹیکس فری بجٹ میں سیلز ٹیکس سنگل ڈیجٹ ،ود ہولڈنگ ٹیکس کے خاتمہ کے اعلان ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اپریل2018ء) تاجر رہنما و ممبر لاہور چیمبرز آف کامرس وانڈسٹری سابق وائس چیئرمین فرایا شہباز اسلم نے کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے ٹیکس فری بجٹ کا اعلان خوش آئند ہے ٹیکس فری بجٹ میں سیلز ٹیکس کو سنگل ڈیجٹ پر لایا جائے اور بجٹ میں ودہولڈنگ ٹیکس کے خاتمہ کا اعلان کیا جائے ۔فائونڈ ر چیئرمین عدنان بٹ نے کہا کہ ود ہولڈنگ ٹیکس کاروباری سرگرمیوں میں رکاوٹ ہے اور سیلز ٹیکس،انکم ٹیکس،یوٹیلٹی بلوں میں مختلف قسم کے ٹیکسوں کی بھر مار کے بعد بینکوںسے اپنی ہی رقم کے لین دین پر ودہولڈنگ ٹیکس کا کوئی جواز باقی نہیں رہتا ۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان بھی اس ٹیکس پر اپنے تحفظات کا اظہار کرچکا ہے اور تمام تاجر و صنعتکار برادری بھی اس ٹیکس کے خاتمہ کیلئے مسلسل صدائے احتجاج بلند کررہی ہے اس لیے بجٹ میں اس ٹیکس کے خاتمہ کا اعلان کرکے تاجر وصنعتکار برادری کو ریلیف دیا جائے ان خیالات کا اظہار انہوںنے فائونڈ ر چیئرمین عدنان بٹ،ارشد بیگ،تنویر احمد،حقیق احمد،شاہد بیگ اور دیگر صنعتکاروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

(جاری ہے)

شہباز اسلم نے کہا کہ ودہولڈنگ ٹیکس کے نفاذسے فوائد کم اور نقصان زیادہ ہیں اس ٹیکس کے باعث نقد رقوم بینکوں سے باہر رکھنے کے رجحان میں اضافہ ود ہولڈنگ ٹیکس کے مضر اثرات ہیں بینکوں سے الیکٹرانک ٹرانسفر یا نقد رقم نکلوانے پر دوہر ے ٹیکسوں کے ساتھ ساتھ بینک اکائونٹس پر منی لانڈرنگ اور ٹیررازم فنانسنگ کے ضمن میں ملکی و بین الاقوامی نگران سخت کئے جانے کے بعد پاکستان میں بینکوں سے باہر رقم رکھنے کے رجحان میں اضافہ ہورہا ہے جو تشویشناک امر ہے۔نقد رقوم بینکوں سے باہر رکھنے کے رجحان میں اضافہ ودہولڈنگ ٹیکس کے مضر اثرات ہیں۔اس لیے ود ہولڈنگ ٹیکس کو فی الفور واپس لیا جائے۔

متعلقہ عنوان :