وزیر اعظم کی کامن ویلتھ اجلاس میں شرکت،

پی ٹی آئی اور مسلم لیگ( ن) ٹویٹر پر آمنے سامنے آگئے شاہد خاقان عباسی نے پہلے قوم کی امریکہ کے ائیر پورٹ پر جگ ہنسائی کرائی اب وہ کامن ویلتھ میں ایک کونے میں دبک کر رہ گئے،بطور وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو احساس ہونا چاہیے وہ عام شخص نہیں ہیں، اگر بطور شاہد خاقان عباسی ان کے ساتھ یہ سلوک ہو تو ہمیں فرق نہیں پڑتا،شریفوں اور ان کے درباریوں کی ناکام خارجہ پالیسی اور فیل ڈپلومیسی کی وجہ سے پاکستان کو دنیا میں رسوائی کا سامنا ہے، ڈاکٹر شیریں مزاری کی وزیر اعظم پر تنقید

ہفتہ اپریل 19:29

وزیر اعظم کی کامن ویلتھ اجلاس میں شرکت،
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2018ء) وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی کامن ویلتھ اجلاس میں شرکت کے حوالے سے پاکستان تحریک انصاف اور مسلم لیگ( ن) ٹویٹر پر آمنے سامنے آگئے ۔ تحریک انصاف کی رہنما ڈاکٹر شیریں مزاری نے وزیر اعظم پر تنقیدکرتے ہوئے کہا ہے کہ شاہد خاقان عباسی نے پہلے قوم کی امریکہ کے ائیر پورٹ پر جگ ہنسائی کرائی ۔

وزیر اعظم کامن ویلتھ میں ایک کونے میں دھبک کر رہ گئے ۔ بطور وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو احساس ہونا چاہیے وہ عام شخص نہیں ہیں۔

(جاری ہے)

انھوں نے کہاکہ اگر بطور شاہد خاقان عباسی ان کے ساتھ یہ سلوک ہو تو ہمیں فرق نہیں پڑتا ۔ بطور وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی پاکستانی قوم کی نمائندگی کر رہے ہیں ،اگر وزیر داخلہ کی حروف تہجی والی فضول منطق مان لی جائے تو کینیڈا کا وزیر اعظم مودی سے پیچھے کیوں ہے۔ شیریں مزاری نے کہاکہ مسلم لیگ ن پاکستان کو بین الاقوامی سطح پر بہت نیچے لے آئی ہے ۔شریفوں اور ان کے درباریوں کی ناکام خارجہ پالیسی اور فیل ڈپلومیسی کی وجہ سے پاکستان کو دنیا میں رسوائی کا سامنا ہے۔ حکومت کے غیر سنجیدہ رویے کی وجہ سے پاکستانی قوم کا وقار پوری دنیا میں کم ہوا ہے ۔