جرمنی نے جی سیون ممالک میں روسی شمولیت کی مخالفت کر دی

جی سیون میں دوبارہ شمولیت سے قبل روس کو شامی تنازعے کے حوالے سے تعمیری پیش رفت کرنا ہوگی، یوکرائنی علاقے کریمیا کا روس کے ساتھ غیر قانونی الحاق اس موقف کی دوسری بڑی وجہ قرار،جرمن وزیر خارجہ ہائیکو ماس

پیر اپریل 19:36

برلن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) جرمن وزیر خارجہ ہائیکو ماس نے روس کی جی سیون ممالک میں شمولیت کی مخالفت کر دی، جی سیون میں دوبارہشمولیت سے قبل روس کو شامی تنازعے کے حوالے سے تعمیری پیش رفت کرنا ہوگی، یوکرائنی علاقے کریمیا کا روس کے ساتھ غیر قانونی الحاق اس موقف کی دوسری بڑی وجہ ہے۔

(جاری ہے)

غیر ملکی میڈیا کے مطابق جرمن وزیر خارجہ ہائیکو ماس نے صنعتی طور پر ترقی یافتہ ممالک کی تنظیم ’جی سیون‘ میں روس کی ممکنہ طور پر دوبارہ شمولیت کی واضح مخالفت کی ہے۔

کینیڈا میں جی سیون کے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں ماس نے کہا کہ ماسکو کی جانب سے یوکرائن کے علاقے کریمیا کا روس کے ساتھ غیر قانونی الحاق ان کے اس موقف کی ایک اہم وجہ ہے۔ ان کے بقول جی سیون میں دوبارہ شامل ہونے کے لیے مذاکرات سے قبل روس کو شامی تنازعے کے حوالے سے بھی تعمیری پیش رفت کرنا چاہیے۔ جرمنی میں حزب اختلاف کی جماعتوں ’ایف ڈی پی‘ اور ’دی لِنکے‘ نے ماس کے اس بیان پر تنقید کی ہے۔