آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سرکاری دورے پر ازبکستان پہنچ گئے، ازبکستان کے صدر سے ملاقات

دونوں ملکوں کا خطے میں امن و استحکام کیلیے کوششیں جاری رکھنے اوردو طرفہ سیکیورٹی تعاون بڑھانے پر اتفاق

جمعہ اپریل 23:30

راولپنڈی: (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 اپریل2018ء) پاکستان اور ازبکستان نے سیکیورٹی کے شعبے میں تعاون بڑھانے اور خطے میں امن و استحکام کیلئے کوششیں جاری رکھنے پر اتفاق کیا ہے۔ملاقات میں ازبک صدر کا کہنا تھا کہ دنیا کو عالمی اور علاقائی امن کے لئے پاکستان کے کرد ارکااعتراف کرنیکی ضرورت ہے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ ((آئی ایس پی آر)) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سرکاری دورے پر ازبکستان پہنچ گئے ۔

(جاری ہے)

ازبکستان پہنچنے پر ازبک وزیرِ دفاع اور چیف آف جنرل سٹاف نے آرمی چیف کا استقبال کیا۔آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ازبکستان کے صدر سے ملاقات کی جس میں انہوں نے دونوں ملکوں کا خطے میں امن و استحکام کیلیے کوششیں جاری رکھنے اوردو طرفہ سیکیورٹی تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا گیا ہے۔ ازبک صدر نے دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستان کی کامیابیوں کو سراہا پرپاکستان کی کردار کی تعریف کی۔ اس موقع پر ازبک صدر کا کہنا تھا کہ دنیا،، علاقائی اور عالمی امن کیلئے پاکستان کے کردار کو تسلیم کرے۔ آرمی چیف نے ازبکستان کے وزیرِ خارجہ اور قومی سیکیورٹی کونسل کے سیکرٹری سے بھی ملاقات کی۔