کینیا: بہادر خواتین نے ٹیکسی ڈرائیور کا پیشہ اپنا لیا، مقبولیت میں اضافہ

بدھ مئی 18:44

نیروبی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) کینیا کی بہادر خواتین نے دارالحکومت نیروبی میں ٹیکسی چلانا شروع کر دی، مقبولیت بڑھنے سے ڈرائیوروں کی تعداد میں اضافہ ہو گیا۔

(جاری ہے)

خاندان کی آمدن میں اضافہ یا مجبوری، کینیا میں خواتین نے ٹیکسی ڈرائیونگ کا پیشہ اپنانا شروع کر دیا، ایک آن لائن کمپنی نے خواتین ڈرائیور متعارف کروائیں اور اب انکی مقبولیت بڑھنے لگی ہے، تنہا سفر کرنے والی خواتین کا زیادہ تر انتخاب خواتین ڈرائیور ہی ہوتی ہیں، مرد مسافر ہوں تو کمپنی جی پی ایس سسٹم کے ذریعے انہیں مانیٹر کرتی ہے، 12 گھنٹے ٹیکسی چلانے پر تمام اخراجات کے بعد ماہانہ ساٹھ ہزار شیلنگ بچتے ہیں جو چھ سو امریکی ڈالر کے لگ بھگ ہوتے ہیں

متعلقہ عنوان :