بلوچستان،چینی افسر کے مبینہ تشدد سے پاکستانی چل بسا

بدھ مئی 19:07

بلوچستان،چینی افسر کے مبینہ تشدد سے پاکستانی چل بسا
شہدادپور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) چینی افسر کے مبینہ تشدد سے پاکستانی چل بسا بلوچستان کے علاقے گڈانی میں حب پاور پروجیکٹ پر کام کرنے والی نجی چائنیز کنسٹرکشن کمپنی پی ای پی سی کے مزدور ملازم 20 سالہ خالد رند ولد زارو خان رند کو مبینہ طور پر چینی افسر لاؤلی نے جان سے مار دیا، خالد کی نعش شہداپور کے قریبی گاؤں میر محمد کلہوڑو میں گھر پہنچنے پر صفِ ماتم بچھ گی ورثاء بھائی کرم اللہ خان رند، غلام مصطفٰی رند ماموں حاجی امیرالدین رند، حاجی نظام الدین رند، حاکم رند، حاجی اربیلو رند و دیگر نے احتجاج کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ ہمارے مقتول خالد ولد زارو خان رند کو کام کرنے کے دوران چینی افسر لاؤلی نے مکسچر مشین کی صفائی کرنے کے لئے مشین کے اندر بھیجا اور بعد میں مشین چلادی جس سے ہمارے نوجوان خالد نے تڑپ تڑپ کر جان دے دی مگر کمپنی کے کسی افسر یا نمائندے نے نعش کے ساتھ آنا تک گوارہ نہ کیا اور ہمارے ساتھ پیش آنے والے واقعے کو دبانے کی کوشش کی جارہی ہے ہماری بلوچستان کے وزیراعلی ، چیف جسٹس آف پاکستان اور آرمی چیف سے مطالبہ ہے کہ واقعہ میں ملوث چینی افسر لاؤلی کو فوری گرفتار کرکے ہمیں انصاف فراہم کیا جائے۔