حکومت کے پاس ایک سال کا بجٹ پیش کرنے کا کوئی اخلاقی جواز ہے نہ ہی آئینی یا قانونی اختیار ، محمد اشرف بھٹی

بدھ مئی 22:45

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) پاکستان پیپلز پارٹی لاہور کے سینئر نائب صدر محمد اشرف بھٹی نے کہا ہے کہ حکومت یہ بتائے کہ اس کو کس نے یہ اختیار دیا ہے کہ وہ جو خود ایک مہینے کی ایک مہمان حکومت وہ پورے ایک سال کا بجٹ اسمبلی میں پیش کرے حکومت کے پاس نہ تو کوئی اخلاقی جواز ہے اور نہ ہی آئینی یا قانونی اختیار ہے کہ وہ ایک سال کا بجٹ پیش کرے ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ حکومت نے اپنے اس آخری بجٹ میں بھی متوسط طبقے کیلئے ہمیشہ کی طرح کوئی ریلیف نہیں دیاہے اس بجٹ میںغریب اور مزدور طبقے کو دیوار کے ساتھ لگا یا گیا ہے ، روزمرہ ضروریات زند گی کی قیمتوں میں کمی کیلئے اقدامات نہیں کیے گئے،،بجلی وگیس کی قیمتوں میں کمی کیلئے بھی کوئی بیل آؤٹ پیکیج نہیں دیا گیا بلکہ سیمنٹ اورپٹرولیم منصوعات پر ٹیکس میں اضافے سے مہنگائی کا طوفان آئے گا۔ انہوںنے کہا کہ کم تنخواہ پانے والے ملازمین کی تنخواہ میں 10 فیصد اضافہ اونٹ کے منہ میں زیرے کے مترادف ہے جبکہ بیوروکریٹس کے الاؤنس میں کئی گنا زیادہ اضافہ کیا گیا ہے ۔