شہر کی تزئین و آرائش اور دلکشی میں اضافے کیلئے مختلف شاہراہوں پر لٹکے ہوئے تاروں اور کیبل وائرز کو ہٹانے کے کام کا آغاز کیا جاچکا ہے، وسیم اختر

کیبل آپریٹرز، انٹر نیٹ سروس فراہم کرنے والی کمپنیوں اور ٹیلی کمیونیکشن کے محکمے ا س سلسلے میں تعائون کریں ،میئر کراچی

بدھ مئی 23:43

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ ترقیاتی کاموں کے ساتھ ساتھ شہر کی تزئین و آرائش اور دلکشی میں اضافے کیلئے شہر کی مختلف شاہراہوں پر لٹکے ہوئے تاروں اور کیبل وائرز کو ہٹانے کے کام کا آغاز کیا جاچکا ہے تمام کیبل آپریٹرز، انٹر نیٹ سروس فراہم کرنے والی کمپنیوں اور ٹیلی کمیونیکشن کے محکوں سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ اس سلسلے میں نہ صرف کے ایم سی تعاون کریں بلکہ از خود اقدامات کرتے ہوئے کیبل اور تار ہٹا دیں اور انہیں زیر زمین بچھانے کیلئے بھی اقدامات کریں، یہ بات انہوں نے پاکستان کیبل آپریٹرز ایسوسی ایشن کی7 رکنی وفد سے ملاقات کے موقع پر کہی جنہوں نے چیئرمین خالد آرائیں کی سربراہی میں میئر کراچی سے ان کے دفتر میں ملاقات کی، اس موقع پر سینئر ڈائریکٹر کو آرڈینیشن مسعود عالم، آئی ٹی کنسلٹنٹ دانیال، وائس چیئرمین کیبل آپریٹرز ایسوسی ایشن غفران مجتبیٰ، صدر اخلاق احمد، نائب صدر شہزاد، نائب صدر عاصم، ایگزیکٹو ممبران شاویز اور عابد طیب بھی موجود تھے، میئر کراچی نے کہا کہ کے ایم سی کے زیر انتظام شہر کی 106 سڑکیں ہیں جن پر لگے ہوئے پولز سے ہر قسم کے تاروں کو ہٹایا جارہا ہے اور اس کے لئے تین ماہ قبل اخبارات میں نوٹسز جاری کئے گئے تھے اور اداروں سے درخواست کی گئی تھی کہ وہ انہیں رضا کارانہ طور پر ہٹالیں بصورت دیگر وہ اپنے نقصان کے خود ذمہ دار ہونگے لیکن کیبل آپریٹرز اور اداروں نے تار اور کیبلز نہیں ہٹائے جس کی وجہ سے ہمیں از خود اقدامات کرنے پڑے، میئر کراچی نے کہا کہ ہمیں شہر کی تزئین و آرائش کے سلسلے میں کیبل آپریٹرز کا تعاون درکار ہے کیونکہ سڑک کے دونوں جانب لٹکے ہوئے تار نہ صرف بدنما لگتے ہیں بلکہ شہر کی ظاہری خوبصورتی بھی متاثر کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ سڑکوں کے اطراف ٹیلی کام کوریڈور بنانے کی تجویز زیر غور ہے تاکہ اس کوریڈور میں ان تمام اداروں اور کمپنیوں کو سہولت مہیا کی جائے جو کیبل، انٹرنیٹ اور ٹیلی کمیونیکیشن کی سروس فراہم کرتے ہیں اس سے سڑکوں کو بار بار کھودنے اور کھمبوں کے ذریعے کیبل اور تاروں کی ترسیل سے نجات ملے گی اور کسی خرابی صورت میں اس ٹیلی کام کوریڈور میں ہی کام کیا جاسکے گا انہوںنے کہا کہ دنیا بھر میں یہی طریقہ رائج ہے اور ہم بھی اسے اپنانے کی کوشش کررہے ہیں میئر کراچی نے کہا کہ چیف جسٹس آف پاکستان کے احکامات کے تحت کیبل اور تاروں کو ہٹانے کے کاموں کا آغاز کیا گیا ہے جسے ہر صورت میں مکمل کرنا ہے، کیبل آپریٹر ایسوسی ایشن کے چیئرمین خالد آرائیں نے اس موقع پر کہا کہ وہ اس سلسلے میں میئر کراچی سے تعاون کریں گے اور کیبل کو زیر زمین بچھانے کاکام شروع کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ تمام کیبل آپریٹرز شہر کی بہتری اور ترقی کے لئے میئر کراچی کے ساتھ ہیں انہوں نے کہا کہ جو زیر زمین کیبل بچھانے کے لئے جن فٹ پاتھ یا سڑکوں کو کاٹا جائے گا ان کی تعمیر و مرمت کے ایم سی کے محکمہ انجینئرنگ کے اطمینان اور معیار کے مطابق کیبل آپریٹر ایسوسی ایشن کرے گی۔