احسن اقبال پر حملہ انتہائی افسوسناک اور قابل مذمت ہے : صاحبزادہ شاہ اویس نورانی

پیر مئی 20:26

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) جمعیت علماء پاکستان کے مرکزی سیکریٹری جنرل اور متحدہ مجلس عمل کے ترجمان صاحبزادہ شاہ محمد اویس نورانی نے میڈیا کو جاری کئے گئے اپنے بیان میں کہا ہے کہ وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال پر فائرنگ کا واقعہ انتہائی افسوسناک اور قابل مذمت ہے۔ جے یو پی کے ملک بھر کے کارکنان و عہدیداران اس واقعہ پر دکھ اور غم و غصے کا اظہار کرتے ہیں۔

یہ واقعہ ملک میں بڑھتی سیاسی و مذہبی انتہا پسندی کا شاخسانہ ہے۔ معاشرے میں عدم برداشت کا بڑھتا رحجان انتہائی خطرناک شکل اختیار کر چکا ہے۔ گولی اور گالی کے کلچر کا خاتمہ کرنا ہو گا۔ احسن اقبال پر قاتلانہ حملہ سے پوری قوم سخت تشویش اور اضطراب میں مبتلا ہو گئی ہے۔ تمام سیاسی و مذہبی جماعتیں ملک میں انتشار اور فساد پھیلانے کی سازش کو ناکام بنانے کے لئے مشترکہ کوششیں کریں۔

(جاری ہے)

ایسا نہ کیا گیا تو سیاسی جماعتوں کے لئے انتخابی مہم چلانا مشکل ہو جائے گا۔ قوم میں امن پسندی، تحمل اور برداشت پیدا کی ضرورت ہے۔ اس طرح کے شدت پسندانہ واقعات کی روک تھام کے لئے لائحہ عمل بنایا جائے۔ ریاست نفرت انگیز تقاریر کو روکنے کے لئے سخت ترین اقدامات کرے۔ شدت پسندی اور عدم برداشت کا معاملہ سیاہی پھینکنے اور جوتا مارنے سے شروع ہو کر گولی مارنے تک پہنچ گیا ہے۔ حقیقی علمائے حق نوجوانوں میں امن پسندی، برداشت، تحمل اور تدبر پیدا کرنے کے لئے اپنا کردار ادا کریں۔ جے یو پی اور ایم ایم اے احسن اقبال کے ساتھ ہمدردی اور یکجہتی کا اظہار کرتی ہے۔ ہم احسن اقبال کی سلامتی اور جلد صحت یابی کے لئے دعاگو ہیں۔