رواں سال بحری راستے سے نیدر لینڈ کو آم کی برآمد یقینی بنائی جائے گی

جمعہ مئی 12:12

رواں سال بحری راستے سے نیدر لینڈ کو آم کی برآمد یقینی بنائی جائے گی
فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) ::پاکستان نے رواں سال بحری راستے سے نیدر لینڈ کو آم برآمد کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ اس میں آم کے بھاری برآمداتی آرڈرز بھی موصول ہو گئے ہیں جو کہ ایک خوش آئند اقدام ہے۔مینگو گروئرز اینڈ ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن پنجاب کے ذرائع نے بتا یا کہ دنیا بھر میں سندھڑی ، چونسا،مالدہ،لنگڑا،سونفیا، دوسہری اور دیگر اقسام کے پاکستانی آ م کو لذت ، ذائقے اور معیار کی بناء پر زبردست پذیرائی اور مقبولیت حاصل ہو ئی ہے۔

انہوںنے بتا یا کہ پاکستان میں آم کی پیداوار ہر سال معیشت کو 25 سے 30کروڑ ڈالر کی آمدنی فراہم کرتی ہے جو کہ دنیا کی کل پیداوار کا 4فصد حصہ ہے ۔انہوںنے بتا یاکہ پاکستانی آم برآمد کنندگان یورپی منڈیوں تک رسائی حاصل کرنے کیلئے بھر پور اقدامات کر رہے ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے بتا یاکہ اگر حکومت پاکستان آم پیدا کرنے والے باغبانوں ، کاشتکاروں اور زمینداروں کو سہولیات فراہم کرے تو آم سے مختلف مصنوعات بھی تیار کر کے دنیا بھر کے ممالک کو برآمد کی جا سکتی ہیں۔انہوںنے بتا یا کہ ایسوسی ایشن آم کے باغات کو کیڑوں اور بیماریوں سے بچانے کیلئے مربوط انسدادی حکمت عملی اپنا رہی ہے جس کے تحت خصوصی معلوماتی کتابچے تیار کر کے باغبانوں کو فراہم کئے جائیں گے۔

متعلقہ عنوان :