جاپان میں باضابطہ انٹرویو سے قبل ملازمت کی پیشکش کا رجحان

بدھ مئی 12:10

ٹوکیو ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 مئی2018ء) جاپان میں کالجوں یا یونیورسٹیوں میں زیرِ تعلیم 40 فیصد سے زائد طلبا کو مختلف کمپنیوں کی جانب سے پہلے ہی ملازمت کی پیشکش کر دی گئی ہے جو ممکنہ طور پر آئندہ سال مارچ میں فارغ التحصیل ہوں گے۔

جاپان میں کئے گئے سروے سے معلوم ہوا ہے کہ ملک میں باضابطہ انٹرویو سے قبل ہی ملازمت کی پیشکش کا رجحان پایا جارہا ہے جبکہ کاروباری فیڈریشن کیدان رین نے اپنی رکن کمپنیوں کے لئے بھرتی سے متعلق کچھ ضوابط ترتیب دیئے ہیں جن کے مطابق کمپنیاں ملازمت کے خواہشمند طلبا سے انٹرویو کا سلسلہ جون سے شروع کر سکتی ہیں۔

ان قوانین و ضوابط کا مقصد اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ طلبا تلاشِ روزگار پر حد سے زیادہ وقت صرف کرنے کے بجائے اپنی تعلیم پر زیادہ توجہ دیں۔ تاہم خلاف ورزی کی سزا نہ ہونے کے باعث بہت سی کمپنیاں ان ضوابط کو نظر انداز کرنے لگی ہیں۔

Your Thoughts and Comments