نواز شریف سے ہاتھ ملانے کی کوشش کرنیوالے لیگی کارکن کو سکیورٹی اہلکاروں نے مشکوک سمجھ کر تشدد کا نشانہ بنا ڈالا

سعد رفیق کارکن کو دوبارہ اسٹیج پر لے آئے ،نواز شریف نے گلے لگا لیا،لیگی کارکن کے شیر شیر کے فلک شگاف نعرے نواز شریف اور عوام میں عاشق ،معشوق کا رشتہ ہے،سکیورٹی اہلکاروں عوام اور قائد کے درمیان رشتے کو بھی سمجھو‘مریم نواز

پیر مئی 21:21

نواز شریف سے ہاتھ ملانے کی کوشش کرنیوالے لیگی کارکن کو سکیورٹی اہلکاروں ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) سابق وزیر اعظم وپاکستان مسلم لیگ (ن) کے تاحیات قائد نواز شریف سے ہاتھ ملانے کی کوشش کرنے والے لیگی کارکن کو سکیورٹی اہلکاروں نے مشکوک سمجھ کر تشدد کا نشانہ بنا ڈالا، نواز شریف نے کارکن کو اسٹیج پر بلا کر گلے لگایا جس پر اس نے خوش ہو کر شیر شیر کے فلک شگاف نعرے لگائے۔ یہ واقعہ الحمراء ہال لاہور میں یومِ تکبیر کے حوالے سے منعقدہ کنونشن میں پیش آیا۔

سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف سٹیج پر اپنی صاحبزادی مریم نواز اور دیگر رہنمائوں کے ساتھ موجود تھے کہ اچانک ایک لیگی کارکن نے ہاتھ ملانے کیلئے ان کی جانب دوڑ لگا دی لیکن سکیورٹی پر مامور اہلکاروں نے اسے پکڑ کر خوب پٹائی کی اور تشدد کرتے ہوئے اسٹیج سے نیچے لے گئے ۔

(جاری ہے)

اس دوران پنڈال میں موجود کارکنوں نے بھی اس پر تشدد شروع کر دیا جس پر کارکن رونے لگا تو خواجہ سعد رفیق پنڈال میں آئے اور کارکن کو گلے لگا کر بوسہ دیا اور اسے واپس اسٹیج پر لے کر گئے ۔

سابق وزیر اعظم نواز شریف نے کارکن کو اسٹیج پر بلا کر گلے سے لگایا۔ جس پر اس نے زور زور سے شیر شیر کے فلک شگاف نعرے لگانا شروع کر دیئے ۔اس موقع پر مریم نواز نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سکیورٹی والوں کو نہیں پتہ کہ نواز شریف اور عوام میں عاشق اور معشوق کا رشتہ ہے۔ میرا بھائی میاں صاحب کو پیار کرنے آیا تھا۔ سکیورٹی اہلکاروں عوام اور قائد کے درمیان رشتے کو بھی سمجھو۔