قومی اسمبلی نے پائیدار ترقیاتی اہداف کے حصول کے لئے ٹاسک فورس کے قیام ‘ اور سپیکر ایاز صادق‘ پارلیمنٹ اور سیاسی جماعتوں کو مبارکباد کی قرارداد منظور کرلی

پائیدار ترقیاتی اہداف کے حصول کے لئے ٹاسک فورس اور سیکرٹریٹ کا قیام خوش آئند ہے، وفاقی وزیر اطلاعات ، نشریات ، قومی تاریخ و ادبی ورثہ مریم اورنگزیب کی قرارداد سپیکر نے اس اہم ایشو پر کام کیا ہے جس میں قانون سازی اور عوام کی رائے کو مقدم رکھا گیا ہے، تمام سیاسی جماعتوں‘ صوبائی اسمبلیوں‘ آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان کی قانون سازی اسمبلیوں اورقائمہ کمیٹی نے بھی اس ضمن میں معاونت کی جو خوش آئند ہے، وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب کا اظہار خیال

منگل مئی 15:09

قومی اسمبلی نے پائیدار ترقیاتی اہداف کے حصول کے لئے ٹاسک فورس کے قیام ..
ْاسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 مئی2018ء) قومی اسمبلی نے پائیدار ترقیاتی اہداف کے حصول کے لئے ٹاسک فورس کے قیام ‘ پارلیمنٹ ہائوس میں سیکرٹریٹ کے قیام اور اس ضمن میں قانون سازی پر سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق‘ پوری پارلیمنٹ اور سیاسی جماعتوں کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے اطمینان کا اظہار کیا ہے۔ منگل کو قومی اسمبلی میں وفاقی وزیر اطلاعات ، نشریات ، قومی تاریخ و ادبی ورثہ مریم اورنگزیب نے قرارداد پیش کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمنٹ ہائوس میں پائیدار ترقیاتی اہداف کے حصول کے لئے سیکرٹریٹ کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جس پر ہم سپیکر‘ ارکان پارلیمنٹ اور سیاسی جماعتوں کو مبارکباد پیش کرتے ہیں۔

پائیدار ترقیاتی اہداف کے حصول کے لئے ٹاسک فورس اور سیکرٹریٹ کا قیام خوش آئند ہے۔

(جاری ہے)

قرارداد میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کی پارلیمان دنیا کی پہلی پارلیمان ہے جہاں ایس جی ڈی سیکرٹریٹ موجود ہے۔ یہ ہائوس اس ضمن میں صوبائی اسمبلیوں میں بھی اس طرح کے اقدامات کی تجویز پیش کرتا ہے۔ پارلیمانی ٹاسک فورس کو مستقبل کی پارلیمان کی ایک مستقل خوبی ہونا چاہیے۔

ایوان نے اس قرارداد کی منظوری دے دی۔ قرارداد کی منظوری کے بعد اظہار خیال کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے سپیکر سردار ایاز صادق کی اس ضمن میں خدمات کی تعریف کی اور ان کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ سپیکر نے اس اہم ایشو پر کام کیا ہے جس میں قانون سازی اور عوام کی رائے کو مقدم رکھا گیا ہے۔ انہوں نے تمام سیاسی جماعتوں‘ صوبائی اسمبلیوں‘ آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان کی قانون سازی اسمبلیوں کا بھی شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ قائمہ کمیٹی نے بھی اس ضمن میں معاونت کی ہے جو خوش آئند ہے۔ ہمیں امید ہے کہ آنے والی پارلیمنٹ اور ارکان پارلیمان اس سے فائدہ اٹھائیں گے۔