آزاد کشمیر کے تمام اضلاع میں واٹر فلٹریشن پلانٹ ناکارہ اور بند ہونے شکایات

وزیربلدیات راجہ نصیرخان کا شدید برہمی کا اظہار،تحقیقات کا حکم

جمعرات مئی 20:21

اسلا م آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) آزاد کشمیر کے تمام اضلاع میں واٹر فلٹریشن پلانٹ ناکارہ اور بند ہونے شکایات پر وزیربلدیات راجہ نصیرخان نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے تحقیقات کا حکم دے دیا جب کہ مرکز چڑھوئی سے غیر حاضر رہنے والے دو ملازمین کے خلاف انکوائری قائم کر دی ہے تمام اضلاع سے وزارت کو مسلسل شکایات وصول ہورہی تھی واٹر فلٹریشن پلانٹ محض علامتی ہیں عوام کو فائدہ نہیں ہورہا ہے جب کے محکمہ بلدیات کوہر سال تین کروڑ کے فنڈز صرف ان کی دیکھ بحال کے لیے دیے جاتے ہیں وزیربلدیات نے اپنے ذرائع سے شکایات کی تصدیق ہونے کے بعد برمی کا اظہار کرتے ہوئے تحقیقات کا حکم جاری کر دیاہے جس کے تحت نظامت کی سطح پر کمیشن بنایا جائے تمام فلڑیشن پلانٹ کی حالت ٹھیک کتنے کی ہے اور بند کتنے ہیں اور ان کی تعداد کتنی ہے کتنے لگائے گے ہیں اب کس حالت میں ہیں مفصل رپورٹ وزارت کوارسال کی جائے جبکہ مرکز چڑھوئی پراجیکٹ منیجراسرار احمد سینئر کلرک چوہدری عارف کی مسلسل غیر حاضری پر ڈپٹی ڈائریکٹر ذولقرنین کیانی کو انکوائری آفیسر مقرر کرتے ہوئے ایک ہفتہ کے اندر رپورٹ طلب کر لی ہے ۔

۔۔راٹھور