کشمیر کی موجودہ صورت حال نے عالمی برادری کو متوجہ کر لیا ، چین

ہندوپاک تعلقات میں بحالی کے لئے تعمیری رول ادا کرنے کے لئے تیار ، ترجمان وزارت خارجہ

ہفتہ جون 16:30

سرینگر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جون2018ء) چین نے بھارت پاک تعلقات کی بحالی میں تعمیری روال ادا کرین کی پیش کش کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ کشمیرکی کشیدہ صورت حال نے بین الاقوامی برادری کی توجہ اپنی طرف مرکوز کی ہے لہذا چین کشمیر کی موجودہ صورت حال کو نظر انداز نہیں کر سکتا ہے ۔۔بھارتی میڈیا کے مطابق چینی وزارت خارجہ کے ترجمان جنگ شوائنگ نے صحافیوں کو بتایاکہ کشمیر میں جو صورت حال پیدا ہو رہی ہے وہ انتہائی خطرناک ہے اور اس صورت حال سے اب براہ راست عالمی برادری کی توجہ کو اپنی جانب مرکوز کر دیا ہے انہوں نے کہا کہ ہندو پاک کے درمیان کشمیر میں کنٹرول لائن پر جو سرحدی کشیدگی بڑھ رہی ہے وہ نہ صرف ہندو پاک کے امن کو غارت کر رہی ہے بلکہ پڑوسی ممالک بھی اس سے متاثر ہوں گے لہذا چین کسی بھیصورت میں اس مسئلے کو نظر انداز نہیں کر سکتا ہے انہوں نے دونوں ممالک کو مشورہ دیا کہ وہ اس نازک مرحلے پر کشمیر مسئلے کے حل کے لئے کوششیں شروع کریں تاہم چین نے دونوں ممالک کو پیش کش کی ہے کہ چین دونوں ممالک کو قریب لانے اور مذاکرات کی بحالی میں تعمیری رولادا کر سکتا ہے ۔

(جاری ہے)

ان کا کہنا تھا کہ اگرچہ بھارت ہر محاذ پر یہ کہتا آیا ہے کہ کشمیر کے معاملے پر تیسرے فریق کی ثالثی ناقابل قبول ہے لیکن اس کے باوجود جو صورت حال بن رہی ہے اس کو نظرانداز نہیں کیاجا سکتا ہے ۔ جنگ سوالیگ کا مزید کہنا تھا کہ چین کو امیدہے کہ دونوں ممالک ہر محاذ پر آگیق آنے کی کوشش کریں گے تاکہ دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی کم ہو سکے ۔ انہوں نے کہا کہ خطے میں پائیدار امن کے لئے لازمی ہے کہ دونوں ممالک چین کی مدد لیں اور کشمیر مسئلے کے حل میں آگے نکل جائیں ۔