سوئٹزرلینڈ میں چینی صدرکے نظریات پر مذاکرے کا انعقاد

جمعرات جون 12:00

جنیوا۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 جون2018ء) سوئٹزرلینڈ کے دارلحکومت جنیوا میںچینی صدر شی جن پنگ کی کتاب ’’چین کی طرز حکمرانی‘‘کے سلسلے کے دوسرے مجموعے اور نئے عہد میں چینی خصوصیات کے حامل سوشلزم کے نظریات کے حوالے سے مذاکرہ چینی وفد کے دفتر میں منعقد ہوا۔چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے مطابق جنیوا میں ہونے والے اس مذاکرے میں بین الاقوامی تنظیموں، سفارتکاروں ،سکالرز اور ذرائع ابلاغ کے دیگر نمائندوں نے شرکت کی۔

جنیوا میں اقوام متحدہ کے دفتر اور سوئٹزرلینڈ میں دوسری بین الاقوامی تنظیموں کے لیے چین کے مستقل مندوب یو جیان ہوا نے کہا کہ چین ہمیشہ عالمی امن کو فروغ دینے والا،ترقی میں خدمات سرانجام دینے والااور بین الاقوامی نظم و نسق کا تحفظ کرنے والا ملک ہے۔

(جاری ہے)

چین کی ترقی دنیا کے لیے امن،ترقی اور تعاون کے مزید زیادہ مواقع فراہم کرے گی۔ چین کا ترقیاتی مزاج دوسرے ممالک کے لیے بھی مناسب ہے کے سوال کے جواب میں جنیوا میں پاکستان کے مستقبل مندوب فرخ عامل نے کہا کہ پاکستان اور چین کے درمیان بہت زیادہ تعاون ہو رہا ہے۔

پاکستان چین سے سیکھ رہا ہے تاہم ایسا نہیں ہوتا کہ بالکل چینی مزاج کا استعمال کیا جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ چینی دوستوں نے کبھی نہیں کہا کہ یہ کرنا چاہیے یہ نہیں۔انہوں نے کہا پاکستان کی اپنی ثقافت ہے اور عوام بھی اپنے انداز میں زندگی گزارتے ہیں۔