نگراں وزیر اطلاعات بیرسٹر سید علی ظفر نے پچاس کروڑ روپے کے انڈومنٹ فنڈ کیلئے ایگزیکٹو کمیٹی کی منظوری دے دی

وفاقی سیکریٹری انجینئر عامر حسن کی سربراہی میں قائم کمیٹی میں ممتاز صحافی حمید ہارون، اعجاز رحیم، ڈاکٹر اشرف، مشرف علی فاروقی شامل ہیں بچوں کو کتاب دوستی کی طرف راغب کرنے کیلئے قومی سطح پر خصوصی پروگرام شروع کیاجائے، وزیراطلاعات بیرسٹرسید علی ظفر مطالعہ کی عادت کے فروغ کیلئے دلچسپ انداز اپنایاجائے،نامور شخصیات بچوں کو کتابیں پڑھ کر سنائیں،بیرسٹر سید علی ظفر کی ہدایت

جمعرات جون 15:21

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 جون2018ء) نگراں وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات وقومی ورثہ بیرسٹر سید علی ظفر نے پچاس کروڑ روپے کے انڈومنٹ فنڈ کے لئے چار رکنی ایگزیکٹو کمیٹی کی منظوری دے دی۔ وفاقی سیکریٹری قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویڑن انجینئر عامر حسن کی سربراہی میں قائم کمیٹی انڈومنٹ فنڈز کے شفاف استعمال کو یقینی بنانے کے علاوہ ملک میں علمی، ادبی اور تاریخی ورثہ سے متعلق سرگرمیوں، منصوبہ جات کی نشاندہی، رقوم کی فراہمی، اور نگرانی کے امور کی بھی ذمہ دار ہوگی۔

وفاقی وزیر بیرسٹر سید علی ظفر نے جمعرات کو قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویڑن میں منعقدہ اعلی سطحی اجلاس کے دوران ایگزیکٹو کمیٹی کی تشکیل کے حکنامے پر دستخط کئے۔ کمیٹی کے دیگر ارکان میں ممتاز صحافی حمید ہارون، اعجاز رحیم، پروفیسر ڈاکٹر اشرف اور نامور لکھاری مشرف علی فاروقی شامل ہیں۔

(جاری ہے)

یہ انڈومنٹ فنڈ گزشتہ حکومت کے دور میں پچاس کروڑ روپے کی لاگت سے قائم کیاگیا تھا جس کا مقصد علمی، ادبی اور تاریخی ورثہ سے متعلق سرگرمیوں کا فروغ اور مستحق لکھاریوں کی امداد کے لئے وسائل کی فراہمی کو یقینی بنانا تھا۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراطلاعات بیرسٹرسید علی ظفر نے بچوں کو کتاب دوستی کی طرف راغب کرنے کے لئے قومی سطح پر خصوصی پروگرام شروع کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ ملک کی نامور شخصیات کی خدمات حاصل کی جائیں جو بچوں کو کتابیں پڑھ کر سنائیں۔ اس پروگرام کا آغاز اسلام آباد سے ہوگا۔ بیرسٹر سید علی ظفر نے کہاکہ بچوں میں مطالعہ کی عادت کوفروغ دینا وقت کی اہم ضرورت ہے کیونکہ مطالعہ کے رجحان میں کمی آرہی ہے۔

بچوں کو اس طرف راغب کرنے کے لئے دلچسپ انداز اپنانا ہوگا۔ ایسا طریقہ کار اپنایا جائے کہ بچوں کو کتاب خوانی میں دلچسپی پیدا ہو اور وہ مطالعہ کا لطف لے سکیں۔ جب وہ نامور شخصیات سے کتاب سنیں گے تو اس سے ان میں مطالعہ کا ذوق بڑھے گا۔ وزیراطلاعات نے لکھاریوں کے حوالہ سے سرگرمیوں کا سالانہ پروگرام مرتب کرنے کی ہدایت کی تاکہ پورے سال میں علی وادبی سرگرمیوں کا سلسلہ بلاتعطل جاری رہے۔

وزیراطلاعات نے اسلام آباد میں قومی میوزیم کی تعمیر کے لئے کام کو مزید تیز کرنے کی ہدایت کی۔ قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویڑن کے جوائنٹ سیکریٹری سید جنید اخلاق نے ڈویڑن کے زیرعمل اور مستقبل کے منصوبہ جات کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ قومی میوزیم کے نقشہ پر کام جاری ہے اور یہ کام رواں مالی سال میں مکمل ہونے کی توقع ہے۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ آئندہ ماہ مری میں دو روزہ کتاب میلہ منعقد کیاجارہا ہے۔

ادارہ فروغ قومی زبان کے زیراہتمام خطاطی نمائش ہوگی جس میں ملکی اور غیرملکی خطاط حصہ لیں گے۔ ’ادب کے سترسال‘ کے موضوع پر سیمینار جولائی میں ہوگا جبکہ نیشنل لائیبریری گلوبل وڑن کے عنوان سے کانفرنس منعقد کررہی ہے جس میں چالیس ممالک سے مندوبین حصہ لیں گے۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ یونیسکو کے اشتراک سے لنڈی کوتل سے لاہور تک تاریخی وتہذیبی مقامات کو کتابی شکل دینے کا منصوبہ شروع کیاجارہا ہے جبکہ ڈیپارٹمنٹ آف آرکیالوجی اینڈ میوزیمز(ڈوم) میں چین کے تعاون سے آرکیالوجیکل سروے برانچ قائم کی جارہی ہے جس سے تہذیبی اور تاریخی قدیم مقامات وعمارات کی بہتر دیکھ بھال میں مدد ملے گی، جدید آلات کی فراہمی کے علاوہ پاکستانی ماہرین کی تربیت بھی کی جائے گی۔

وزیراطلاعات نے ڈویڑن کے مجوزہ اور زیرعمل منصوبہ جات کو سراہتے ہوئے ہدایت کی کہ مختلف منصوبہ جات کے مراحل کے لئے ڈیڈ لائنز کا تعین کیاجائے۔ اجلاس میں وفاقی سیکریٹری قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویڑن انجینئر عامر حسن، ادارہ فروغ قومی زبان کے سربراہ افتخار عارف، نیشنل بٴْک فا?نڈیشن کے ایم ڈی ڈاکٹر انعام الحق جاوید، قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویڑن اور اس کے ماتحت اداروں کے اعلی حکام شریک ہوئے۔