فیصل آباد ‘گردوں کی غیر قانونی پیوندکاری کرنے والا ڈاکٹر گریڈ 18کا سرکاری ملازم نکلا

اٹک کی تحصیل حضرو ٹی ایچ کیو ہسپتال میں انستھیزیا سپیشلسٹ ہے ‘پنجاب کے مختلف سرکاری ہسپتالوں میں تعینات رہ چکا ہے حضرو میں بیوی کے سا تھ مل کر نجی ہسپتال بھی بنا رکھا ہے زیر حراست ملزم سے بڑے انکشاف کی توقع کی جا رہی ہے

پیر جون 12:20

فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 جون2018ء) فیصل آباد میں گردوں کی غیر قانونی پیوندکاری کرنے والا ڈاکٹر گریڈ 18کا سرکاری ملازم نکلاایف آئی اے کے زیر حراست ملزم کے مزید انکشاف ضلع اٹک کی تحصیل حضرو ٹی ایچ کیو ہسپتال میں انستھیزیا سپیشلسٹ ہے پنجاب کے مختلف سرکاری ہسپتالوں میں تعنیات رہ چکا ہے حضرو میں بیوی کے سا تھ مل کر ایک ہسپتال بھی بنا رکھا ہے تفصیل کے مطا بق ایف آئی اے فیصل آبا کے زیر حراست گردوں کی غیر قانونی پیوند کاری کر نے والا ڈا کٹر منظور حسین سرکاری ملازم نکلا ملزم ضلع اٹک کی تحصیل حضرو میں ٹی ایچ کیو ہسپتال میں گریڈ 18میں بطور انستھیزیا سپیشلسٹ کام کر رہا ہے اس سے پہلے وہ شا لیمار ہسپتال لا ہو ر، نواز شریف سو شل سکیورٹی ہسپتال لا ہور ،،واپڈا ہسپتال تربیلا غازی میں بھی تعنیات رہا حضرو میں اپنا نجی ہسپتال بھی بنا رکھا ہے جس میں اس کی بیوی بھی حصہ دار ہے ایف آئی اے نے ملزم ڈا کٹر منظور حسین کے اعترا فی بیان کی ویڈیو ریکارڈنگ بھی جاری کر دی ذرائع کے مطا بق ملزم مختلف علاقوں سے بک کیے گئے مریض کی غیر قانونی پیوند کاری فیصل آباد اور دیگر چھوٹے ہسپتالوں میں بھاری فیس کے عوض کر تا حضرو میں اپنے نجی ہسپتال میں نہیں کر تا تھا وہاں سے بک کیے گئے مریض کو فیصل آباد لے آتا اور لا کھوں روپے لیکر غیر قانونی پیونکاری کر تا تھا ذرائع نے بتا یا کہ ملزم سے مزید بڑئے انکشاف کی توقع کی جا رہی ہے ایف آئی اے ذرائع کے مطا بق ملزم کے خلاف مقدمہ درج کر کے کیس پنجاب ہلتھ کیئر کمیشن کے سپرد کر دیا جا ئے گا ۔