یو اے ای نے جنگ اور قدرتی آفات سے متاثرہ ممالک کے شہریوں کے ویزے میں ایک سال کی توسیع کر دی

متعلقہ غیر ملکیوں سے کسی بے ضابطگی پر کوئی کارروائی نہیں کی جائے گی اور وہ جرمانے سے بھی مستثنا ہوں گے، یو اے ای

منگل جون 15:50

ابو ظہبی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 جون2018ء) یو اے ای نے جنگ اور قدرتی آفات سے متاثرہ غیر ملکیوں کے ویزے میں ایک سال کی توسیع کر دی،متعلقہ غیر ملکیوں سے کسی بے ضابطگی پر کوئی کارروائی نہیں کی جائے گی اور وہ جرمانے سے بھی مستثنا ہوں گے،یو اے ای کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق متحدہ عرب امارات کی کابینہ نے جنگوں اور قدرتی آفات سے متاثرہ ممالک کے شہریوں کو مزید ایک سال کے لیے مملکت میں قیام کی اجازت دے دی ہے۔

امارات کی کابینہ نے سوموار کو اس ضمن میں ایک قرارداد کی منظوری دی ہے۔اس کے تحت جنگوں اور قدرتی آفات سے متاثرہ ممالک کے شہریوں کے ویزوں میں غیر مشروط طور پر مزید ایک سال کے لیے توسیع کردی جائے گی۔ وہ ویزے کی مدت ختم ہونے کی صورت میں اس سال یکم اگست سے 31 اکتوبر تک یو اے ای میں مزید قیام کر سکتے ہیں ۔

(جاری ہے)

ان کے خلاف ویزے سے متعلق کسی بے ضابطگی پر کوئی کارروائی نہیں کی جائے گی اور وہ جرمانے سے بھی مستثنا ہوں گے۔

کابینہ کا اجلاس یو اے ای کے نائب صدر، وزیراعظم اور دبئی کے حکمراں شیخ محمد بن راشد آل مکتوم کی صدارت میں ہوا ۔ یو اے ای کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام کے مطابق امارات اقتصادی ترقی ، ثقافتی اقدار اور سماجی اور سیاسی استحکام کے لیے ایک عالمی ماڈل پر عمل پیرا ہے۔اس کی خارجہ پالیسی شیخ زاید بن سلطان آل نہیان نے ایک طویل عرصہ قبل دانش ،جدیدیت اور تمام ریاستوں سے بہتر تعلقات برقرار رکھنے کے تزویری اصول پر استوار کی تھی تاکہ دنیا بھر میں ضرورت مند اور مصائب سے دوچار افراد کی مدد کی جاسکے اور بین الاقوامی سطح پر امن و استحکام کے فروغ میں موثر کردار ادا کیا جا سکے۔