گہری کھیلیوں میں کماد کی کاشت سے پانی کی 50 فیصد تک بچت اور شاندار پیداوار حاصل کی جاسکتی ہے ، ماہرین زراعت

بدھ ستمبر 15:19

فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 11 ستمبر2019ء) ماہرین زراعت نے کہاہے کہ گہری کھیلیوں میں کماد کی کاشت سے پانی کی 50 فیصد تک بچت اور شاندار پیداوار حاصل کی جاسکتی ہے لہٰذا کاشتکار گہری کھیلیوں میں کمادکی ستمبر کاشت کاعمل یقینی بنائیں اور کھیلیوں میں پہلے فاسفورسی اور پوٹاش کی کھاد ڈال کر سیاڑیو ں میں سموں کی 2لائنیں آٹھ سے نو انچ کے فاصلے پر اس طرح لگائیں کہ سموں کے سرے آپس میں ملے ہوئے ہوں اور بعد ازاں انہیں مٹی کی ہلکی تہہ سے ڈھانپ دیاجائے ۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ کاشتکار ستمبر کاشتہ کماد کو مناسب وقفہ پر پانی لگائیں اور جب کھیلیاں خشک ہو جائیں تو اسے فصل کے اگنے تک حسب ضرورت آبپاشی کی سہولت فراہم کی جاتی رہے تاکہ کماد کی اچھی پیداوار حاصل ہو سکے۔ انہوں نے بتایاکہ کاشتکاروں کو چاہیے کہ وہ کماد کی صرف منظور شدہ اقسام ہی کاشت کریں کیونکہ غیر منظور شدہ اقسام کی کاشت سے انہیں بھاری مالی اور ذہنی نقصان کابھی سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

متعلقہ عنوان :