ضلع خیبر پور میں کھجور کی سالانہ 7 لاکھ ٹن پیداوار، صرف40 فیصد برآمد کی جاتی ہے

جمعرات ستمبر 10:25

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 12 ستمبر2019ء) سندھ کے ضلع خیبر پور میں سالانہ 7 لاکھ ٹن کھجور پیدا کی جاتی ہے۔ ضلع میں پیدا ہونے والی 60 فیصد کھجور مقامی مارکیٹ میں فروخت کی جاتی ہے جبکہ پیداوار کا صرف40 فیصد حصہ برآمد کیا جا رہا ہے۔

(جاری ہے)

معروف تجزیہ کار امتیازحسین نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ پاکستان، انڈونیشیا، ملائیشیاء، چین، امریکا، برطانیہ، جرمنی کینیڈا سمیت دیگر یورپی ممالک کو تازہ کھجوریں برآمد کرتا ہے جبکہ بھارت اور بنگہ دیش چھوہاروں کے بڑے درآمد کنندگان میں شامل ہیں۔

انہوں نے کہاکہ بھارت اپنی درآمدات کے 80 فیصد کے مساوی چھوہاروں کی درآمدات خیبر پور سے کرتا ہے جبکہ بنگلہ دیش 10 فیصد درآمدات کرتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ علاقہ میں پیدا ہونے والی کھجور کی برآمدات میں اضافہ کیا جا سکتا ہے جس کے لئے تحقیق و تربیت، پیکنگ، سٹوریج اور مارکیٹنگ کی سہولیات میں اضافہ کے ساتھ ساتھ کھجور کی بیماریوں پر قابو پانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ کھجور کی برآمدات میں اضافہ سے قیمتی زرمبادلہ کے حصول کو یقینی بنایا جا سکتا ہے۔