سوسالہ زندگی کا جشن منانے والی جڑواں بہنیں

لمبی زندگی گزارنے کا راز خونی رشتوں کے قریب رہنے میں چھپا ہے

Sajjad Qadir سجاد قادر ہفتہ اکتوبر 06:30

سوسالہ زندگی کا جشن منانے والی جڑواں بہنیں
پیرس ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 اکتوبر2019ء)   خوشیاں بانٹنے سے ملتی ہیں اور اس کا محور اور منبع یہ ہے کہ آپ اپنے خونی رشتوں کے قریب بلکہ بہت قریب رہیں۔اس وقت دنیا بھر میں ایوریج عمر60برس گنی جا رہی ہے کم سے کم پاکستان میں تو یہی عمر ہے مگر پھر بھی پاکستان سمیت دنیا بھر میں کئی ایسے لوگ موجود ہیں جو سو سال سے زائد کی عمر پاچکے ہیں۔

ابھی حال ہی میں فرانس کی دو جڑواں بہنوں نے سو سالہ سالگرہ کا جشن اپنے پڑپوتوں کے ساتھ منایا ہے۔ فرانس کی جڑواں بہنوں میری لی میری اور جینیویو بولی گینڈ نے اپنی 100 ویں سالگرہ کو پڑپوتوں کے ساتھ منا کر یادگار بنادیا۔دونوں جڑواں بہنیں سن 1919 میں ویسٹرن فرانس کے چھوٹے سے قصبے فے دی بریتگنے میں 17 اکتوبر کو پیدا ہوئیں۔میری لی اور جینیویو کی سالگرہ کے موقع پر ان کے اہل خانہ سینٹ جوزف نرسنگ ہوم پہنچے اور اس لمحے کو جشن منا کر یادگار بنایا۔

(جاری ہے)

ماضی کی یادیں تازہ کرتے ہوئے دونوں بہنوں کا کہنا تھا کہ جب ہم 17 سال کی تھیں تو والدین نے 1936 میں فیملی فارم خریدا جس میں ہم نے ہنسی خوشی زندگی بسر کی۔میری لی اور بولی گینڈ کے مطابق جب 20 سال کی ہوئیں تو دوسری عالمی جنگ شروع ہوگئی۔ان کا کہنا تھا کہ دوسری جنگ عظیم کے خاتمے کے بعد 1947 میں بولی گینڈ رشتہ ازدواج میں منسلک ہوگئیں اس کے دو سال بعد لی میری کی بھی شادی ہوگئی۔

بہنوں نے لمبی زندگی کا راز بتاتے ہوئے کہا کہ الکوحل سے دور رہیں، خاندان کے ساتھ زیادہ وقت گزاریں اور صحت مند خوراک کا استعمال کریں۔بولی گینڈ کے مطابق ہم دونوں شادی کے بعد بھی ایک دوسرے سے رابطے میں رہتے تھے ۔ بولی گیڈ کے چار بچے اور گیارہ بچوں کی وہ نانی یا دادی ہیں، ان کے 16 پڑپوتے ہیں، اسی طرح لی میری کے دو بچے ہیں، ایک بچے کی وہ دادی ہیں اور ان کے تین پڑپوتے ہیں۔دونوں بہنیں 2016 میں نرسنگ ہوم میں زندگی گزارنے چلی گئی تھیں، ان کا کہنا ہے کہ وہ یہاں ساتھ ایک چھت تلے رہ کر بہت خوش ہیں۔

متعلقہ عنوان :