لیبیا، مشرق اور مغرب کے درمیان زمینی راستوں کے کھولے جانے کا آغاز

وفاقی فورسز نے الجفرہ کی سمت القداحیہ کو وادی زمزم سے ملانے والے داخلی راستوں پر سے مٹی کی رکاوٹیں ہٹا دیں

ہفتہ نومبر 16:24

طرابلس (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 21 نومبر2020ء) لیبیا میں متحارب فریقوں نے ملک کے مشرق اور مغرب کے درمیان کئی ماہ سے بند پڑے ہوئے زمینی راستوں کو کھولنے کے اقدامات کا آغاز کر دیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق یہ پیش رفت عسکری کمیٹی (5+5) کے اجلاس میں طے پانے والے فیصلوں اور مفاہمتوں پر عمل درامد کرتے ہوئے سامنے آئی ۔مصراتہ شہر میں وفاق حکومت کی ہمنوا فورسز نے الجفرہ کی سمت القداحیہ کو وادی زمزم سے ملانے والے داخلی راستوں پر سے مٹی کی رکاوٹیں ہٹا دیں۔

الجفرہ کا علاقہ لیبیا کی فوج اور وفاق حکومت کی فورسز کے درمیان ریڈ لائن قرار دیا جاتا ہے۔ ابھی سرت اور طرابلس اور مصراتہ اور مشرقی لیبیا کے دیگر شہروں کے درمیان راستوں پر سے رکاوٹیں اور وہاں نصب بارودی سرنگیں ہٹائے جانے کا انتظار ہے۔

(جاری ہے)

مشترکہ عسکری کمیٹی (5+5) نے گذشتہ ہفتے سرت شہر میں اختام پذیر ہونے والے اپنے اجلاس میں متعدد امور پر اتفاق کا اظہار کیا تھا۔

ان میں مشرق اور مغرب کے درمیان ساحلی راستے کو کھولنا اور اسی طرح لائن آف کنٹیکٹ کے علاقے سے اجرتی جنگجوئوں کا باہر نکالا جانا شامل ہے۔گذشتہ ماہ لیبیا کے مشرق اور مغرب کے بیچ فضائی حدود کو کھول دیا گیا تھا۔ اس طرح ایک سال تک کے وقفے کے بعد دارالحکومت طرابلس سے دیگر شہروں کے لیے فضائی پروازوں کی آمد ورفت کا دوبارہ آغاز ہو گیا۔

متعلقہ عنوان :