پی ٹی آئی کے ارکان اسمبلی کا سندھ اسمبلی کی سیڑھیوں پر انوکھا احتجاج

لوڈشیڈنگ پر قابو نہ پانے پر وزیراعلیٰ اور صوبائی وزرا کیلئے سیڑھیوں پر چوڑیاں رکھ دیں مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں سندھ کا مقدمہ نہ لڑنے پر وزیراعلی سندھ یہ چوڑیاں پہن لیں، رکن اسمبلی خرم شیر زمان 8سے 18گھنٹے کی لوڈشیڈنگ نے عوام کی زندگی اجیرن کردی ہے اور حکمران چین کی بانسری بجا رہے ہیں۔ انہیں حکمرانی کا کوئی حق نہیں ہے

پیر اپریل 23:25

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ پیر اپریل ء) پی ٹی آئی کے ارکان اسمبلی کا سندھ اسمبلی کی سیڑھیوں پر انوکھا احتجاج، لوڈشیڈنگ پر قابو نہ پانے پر وزیراعلی اور صوبائی وزرا کے لئے سیڑھیوں پر چوڑیاں رکھ دیں۔ پیر کو سندھ اسمبلی اجلاس سے قبل پی ٹی آئی کے پارلیمانی لیڈر خرم شیرزمان اور ڈاکٹر سیما ضیا نے سندھ اسمبلی کی سیڑھیوں پر لوڈشیڈنگ پر قابو نہ پانے پر سندھ حکومت کے خلاف انوکھا احتجاج کیا اور سیڑھیوں پر وزیراعلی سندھ، صوبائی وزرا اور حکومتی ارکان کے لئے چوڑیاں رکھ دی۔

خرم شیرزمان بولے کہ مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں سندھ کا مقدمہ نہ لڑنے پر وزیراعلی سندھ یہ چوڑیاں پہن لیں۔ سندھ حکومت نے لوڈشیںدنگ کے خاتمے کے لئے کوئی موثر اقدامات نہیں اٹھائے اور نہ ہی وفاقی حکومت کے خلاف کوئی ٹھوس احتجاج کیا۔

(جاری ہے)

خرم شیرزمان نے کہا کہ سندھ کے نااہل حکمرانوں کی نااہلی کی سزا صوبے کے عوام بھگت رہے ہیں۔ 8سے 18گھنٹے کی لوڈشیڈنگ نے عوام کی زندگی اجیرن کردی ہے اور حکمران چین کی بانسری بجا رہے ہیں۔

انہیں حکمرانی کا کوئی حق نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعلی سندھ اور صوبائی وزرا کروڑوں روپے مالیت کی گاڑیوں میں ٹیکس پیئر کے پیسے سے گھوم رہے ہیں۔ اگر وفاق بجلی نہیں دے رہی تو آپ جا کر انکے ساتھ لڑیں۔ اپنی عیاشیوں میں مصروف ہیں۔ اب بہت ہوگیا سندھ کے عوام اٹھیں گے۔ خرم شیرزمان نے کہا کہ نثار کھوڑو اور دئگر صوبائی وزرا کیوں وفاق سے صوبے کے عوام کا حق نہیں لیتے جائیں اور جاکر ہمارا حق ان سے چھینیں آخر عوام کب تک لوڈشیڈنگ کا عزاب جھیلتی رہے گی۔

Your Thoughts and Comments