چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کا 50 سال سے قبضہ کی گئی اراضی بیوہ کو واپس دلانے کا حکم

سیشن جج پشاور کی سربراہی میں کمیشن تشکیل دیا جارہار ہے جس میں ایس ایم بی آر کے ممبر بھی ہوں گے ،ْچیف جسٹس

جمعہ اپریل 18:27

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ جمعہ اپریل ء)چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے 50 سال سے قبضہ کی گئی اراضی بیوہ کو واپس دلانے کا حکم جاری کردیا۔ جمعہ کو چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے پشاور سپریم کورٹ رجسٹری میں جائیداد اور حق مہر کے حوالے سے کیس سماعت کرتے ہوئی50 سال سے قبضہ کی گئی اراضی بیوہ کو دینے کا حکم جاری کردیا اور سیشن جج پشاور کی سربراہی میں کمیشن تشکیل دیکر اراضی کا قبضہ بیوہ کو دینے کا حکم دیا ہے۔

(جاری ہے)

پشاور سے تعلق رکھنے والی بیوہ نے چیف جسٹس آف پاکستان کو درخواست دی کہ 50 سال ہونے کو ہیں تاہم میرے سسرالی حق مہر کی ادائیگی نہیں کررہے، انہوں نے 50 سال سے میرے مرحوم شوہر کی 53 کنال اراضی پر قبضہ کررکھا ہے، چیف جسٹس آف پاکستان نے حکم جاری کیا کہ سیشن جج پشاور کی سربراہی میں کمیشن تشکیل دیا جارہار ہے جس میں ایس ایم بی آر کے ممبر بھی ہوں گے۔سماعت کے بعد بیوہ خاتون نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ پچھلے 50 سالوں سے انصاف کیلئے ٹھوکریں کھارہی تھیں اور اب چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے انھیں انصاف دلایا ہے، خاتون خوشی کے مارے روپڑیں۔

Your Thoughts and Comments