Aik Qaidi Bemaar Para - Joke No. 882

ایک قیدی بیمار پڑا - لطیفہ نمبر 882

ایک قیدی بیمار پڑا تو اس کی مزاج پرسی کے لئے جیلر آیا پوچھا کہ کسے ہو؟ قیدی نے تکلیف سے کراہتے ہوئے کہا۔ ”جی پہلے ٹانگ میں درد تھا وہ ڈاکٹر نے کاٹ کر پھینک دی۔پھر بازو میں درد تیز ہوا تو اسے بھی کاٹ ڈالا۔ اب کان میں شدید درد ہے لازماً اسے بھی کاٹ دیا جائے گا ”اچھا تو تم آہستہ آہستہ جیل سے فرار ہونا چاہتے ہو؟ جیلر نے تشویش ظاہر کی۔

مزید لطیفے

بھارت کے صوبہ بہار

Bharat ke subha bihar

ڈاکٹر مریض سے

Dr mareez se

سیکرٹری اور افسر

secretary and officer

یاد

yaad

استاد شاگرد سے

Ustaad shagird se

بلیڈ

Blade

استاد شاگرد سے

Ustaad shagird se

ہمدردی کے دو بول

hamdardi ke do bol

جج ملزم سے

Judge mulzim se

مالک مکان

maalik makaan

پروفیسر

professor

ایک راہگیر نے فقیر سے کہا

aik rahageer ne faqeer se kaha

Your Thoughts and Comments