Sardar Ji - Joke No. 820

سردار جی - لطیفہ نمبر 820

سردار جی بتا رہے تھے۔ ”کل میں نے تیر کر دریا پار کرنے کا ارادہ کیا لیکن بالکل درمیان میں پہنچ کر تھک گیا۔“ ”پھر کیا ہوا؟“ ”ہونا کیا تھا… میں درمیان سے پلٹ کر پھر اسی کنارے پر آ گیا۔“ سردار جی نے عقلمندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کہا۔

مزید لطیفے

جج ملزم سے

Judge mulzim se

دعویٰ

Daewa

ساڑی

Sarhi

ایک شعبدہ باز

aik shobadaa baz

شیر کی شادی

Shair ki shaadi

گرما گرم مونگ پھلی

Garma Garam Mong Phali

جوتوں کی دوکان

jooton ki dokaan

صحت مند مرد کی تلاش

sehat mand mard ki talaash

استاد شاگرد سے

Ustad Shagird se

راوی اور چناب کہاں ہیں؟

Ravi Aur Chenab Kahan hai

آسان پہیلی

aasan paheli

مصنف ملازم سے

musanif mulazim se

Your Thoughts and Comments