ای الیون میں لڑکے لڑکی کو ہراساں کرنے سے متعلق کیس میں عدالت نے مرکزی ملزم عثمان مرزا سمیت دیگر شریک ملزمان پر فرد جرم عائد

منگل 28 ستمبر 2021 13:57

ای الیون میں لڑکے لڑکی کو ہراساں کرنے سے متعلق کیس میں عدالت نے مرکزی ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 28 ستمبر2021ء) وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں کے علاقے ای الیون میں لڑکے لڑکی کو ہراساں کرنے سے متعلق کیس میں عدالت نے مرکزی ملزم عثمان مرزا سمیت دیگر شریک ملزمان پر فرد جرم عائد کر دی جبکہ عدالت نے استغاثہ سے شہادتیں طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت بارہ اکتوبر تک ملتوی کرتے ہوئے تین ملزمان کی ضمانتیں منسوخ کرتے ہوئے دو ماہ میں کیس کا فیصلہ کرنے کا حکم دے دیا۔

منگل کو اسلام آباد کی مقامی عدالت کے جج عطاء ربانی نے تھانہ گولڑہ کی حدود میں فلیٹ میں لڑکے لڑکی کو ہراساں کرنے سے متعلق کیس میں مرکزی ملزم عثمان مرزا سمیت دیگر سات شریک ملزمان حافظ عطا الرحمن،ادارس قیوم بٹ،ریحان،عمر بلال مروت،محب بنگش،فرحان شاہین پر بھی فرد جرم عائد کر دی گئی۔

(جاری ہے)

دوران سماعت ملزمان کو چارج شیٹ پڑھ کر سنائی گئی۔

ملزمان نے صحت جرم سے انکار کردیا۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر استغاثہ سے شہادتیں طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت بارہ اکتوبر تک ملتوی کردی۔ دوسری جانب اسلام آباد ہائیکورٹ نے واقعے کے تین شریک ملزمان ادارس قیوم بٹ،حافظ عطا الرحمن،فرحان شاہین کی ضمانتیں خارج کرتے ہوئے کیس کا ٹرائل دو ماہ میں مکمل کرنے کا حکم دے دیا۔جسٹس محسن اختر کیانی نے درخواست ضمانت پر دلائل کے بعد فیصلہ سنا دیا۔

متعلقہ عنوان :

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments