صوبہ بھر میںاوقاف کی جائیدادوں کا تفصیلی آڈٹ بھی کرایا جائے گا: سید سعید الحسن شاہ

اوقاف پنجاب کی 10ہزار ایکڑ اراضی رقبہ کو نا جائز قابضین سے واگزکروانے کے لئے تیز تر اقدامات عمل میں لائے جائیں گے اوقاف کی اراضی کو ناجائز قابضین سے واگزار کروا کے شفاف طریقے سے لیز پر دی جاسکے گی، جس میں سے 29 ہزار ایکڑسے زائدرقبہ زیر کاشت اور 45 ہزار ایکڑ سے زائدرقبہ غیر کاشت ہے ،صوبائی وزیر

بدھ نومبر 22:27

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 13 نومبر2019ء) صوبائی وزیر اوقاف سید سعید الحسن شاہ نے محکمانہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کی ہدایات کے مطابق محکمہ اوقاف کی اراضی پرناجائزقبضے چھڑانے اور عوامی استعمال میں لانے کے لیے ضروری قانون سازی اور موثرپالیسی وضع کی جارہی ہے ۔ اس سلسلہ میں اوقاف کی 10ہزار ایکڑ اراضی رقبہ کو نا جائز قابضین سے واگزکروانے کے لئے تیز تر اقدامات عمل میں لائے جائیں گے تا کہ اوقاف کی اراضی کو ناجائز قابضین سے واگزار کروا کے شفاف طریقے سے لیز پر دی جاسکے ۔

صوبہ بھر میںاوقاف کی جائیدادوں کا تفصیلی آڈٹ بھی کرایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ مذہبی سیاحت کے فروغ کے لیے ٹھوس اقدامات کئے جائیں گے ۔ محکمہ کی و گزار کر دہ اراضی سے آمدن میں اضافے کے لیے موثر بزنس پلان تیارکیا جائے گا۔

(جاری ہے)

اس سلسلہ میں واگزار کردہ اراضی پر سیاحوں کے لئے خوبصورت و دلکش ہوٹل ، ریزورٹس اور پارکس بنائے جائیں گے۔ انہوں نے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ صوبہ بھر میںمحکمہ اوقاف کے 546 مزاراور 437مساجدہیں۔

بادشاہی مسجد، داتا دربار داتا دربار ہسپتال،لاہور،گوجرانوالہ،سرگودہا،راولپنڈی،فیصل آباد،پاکپتن،ملتان،بہاولپور، اور ڈیرہ غازی خان میں محکمہ اوقاف پنجاب کی کل 75 ہزار ایکڑ رقبہ اراضی پر محیط ہے جس میں سے 29 ہزار ایکڑ سے زائدرقبہ زیر کاشت اور 45 ہزار ایکڑ سے زائدرقبہ غیر کاشت ہے۔اوقاف کی اراضی پر واقع 1426 رہائش گاہیں اور 6179 اراضی پر دکانیں واقع ہیں جو کہ کرائے پر ہیں۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments