پشاور اور اس کے گرد و نواح میں گیس کی سپلائی اور کم پریشر سے متعلق اجلاس

گیس پائپ لائن انفراسٹرکچر کو اپگریڈ کر کے کم پر یشر کا مسئلہ جلد از جلد حل کیا جائے،وزیراعلی محمودخان

بدھ نومبر 20:50

پشاور اور اس کے گرد و نواح میں گیس کی سپلائی اور کم پریشر سے متعلق اجلاس
پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 نومبر2020ء) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کی زیر صدرات پشاور اور اس کے گرد و نواح میں گیس کی سپلائی اور کم پریشر سے متعلق اجلاس منعقد ہوا جس میں صوبائی وزراء تیمور سلیم جھگڑا، اشتیاق ارمڑ، اراکین صوبائی اسمبلی آصف خان، ارباب وسیم، جنرل منیجر سوئی نادرن گیس پائپ لائن تاج علی و دیگر نے شرکت کی۔

وزیر اعلیٰ نے پورے صوبے بالخصوص پشاور اور اس کے گرد ونواح میں موسم سرما کے دوران سوئی گیس کے کم پریشر کو ایک اہم عوامی مسئلہ قرار دیتے ہوئے متعلقہ حکام کو اس کے حل کے لیے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات اٹھانے کی ہدایت کی ہے انہوں نے کہا کہ گیس پائپ لائن انفراسٹرکچر کو اپگریڈ کر کے کم پر یشر کا مسئلہ جلد از جلد حل کیا جائے تاکہ صارفین کو کسی قسم کی پر یشانی کا سامنا نہ ہو۔

(جاری ہے)

وزیر اعلیٰ نے صارفین کو رواں موسم سرما میں بلا تعطل گیس کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے نئے پائن لائن بچھانے پر کام مزید تیز کرنے کی بھی ہدایت کی ہے۔ اس موقع پر اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ گیس کی ترسیل اور پریشر کی بہتری کے لیے مختلف منصوبوں پر کام شروع ہے جن کی تکمیل سے گیس کے کم پریشر سے متعلق مسائل حل ہو جائیں گے۔ مزید بتایا گیا کہ 150 کلومیٹر گیس پائپ لائن انفراسٹرکچر کی بحالی پر کام جاری ہے جس سے گیس سپلائی میں خاطر خواہ بہتری آئے گی جبکہ پشاور اور اس کے گرد و نواح میں آئندہ چند روز میں گیس کی لوڈ شیڈنگ اور کم پریشر کے مسئلے پر قابو پا لیا جائے گا۔

اجلاس کوآگاہ کیا گیا کہ گیس انفراسٹرکچر کو مضبوط بنانے کے لیے ڈھائی ارب کا منصوبہ منظور ہوا ہے جس سے گیس سپلائی میں بہتری آئے گی۔

پشاور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments