ہٹیاں بالا‘ سجاد ولد سرور پیرذادہ نے ریشیاں کٹھہ سے 15سالہ یتیم بچی رخسانہ بی بی دختر اکبر شیخ کو معصوم پیرزادہ،سیف الدین پیرزادہ سے اغواء کروا کر لڑکی کی عدالت میں بیان دلوا کر غائب کروادیا

اتوار اپریل 13:30

ہٹیاں بالا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 اپریل2018ء) سیاسی رہنما انصر پیرزادہ کی سرپرستی میں بھتیجے سجاد ولد سرور پیرذادہ نے ریشیاں کٹھہ سے 15سالہ یتیم بچی رخسانہ بی بی دختر اکبر شیخ کو معصوم پیرزادہ،سیف الدین پیرزادہ سے اغواء کروا کر لڑکی کی عدالت میں بیان دلوا کر غائب کروادیا،بیوہ ماں اور دیگر ورثاء روتے چلاتے انصر پیرزادہ کے گھر پہنچ گئے 4گھنٹے تک گھر سے باہر بٹھانے کے بعد انصر پیرزادہ نے دھکے دے کر نکال دیا تھانہ ہٹیاں بالا اور تھانہ سٹی مظفرآبادمیں درخواستیں دے دیں گیں مگر تاحال نہ توکوئی ملزم گرفتار ہوا اور نہ ہی لڑکی بازیاب ہو سکی مظلوم خاندان فریاد لے جہلم ویلی میں صحافیوں کے پاس پہنچ گیا۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق حلقہ 6ریشیاں کٹھہ کے رہائشی بیگم جان بیون اکبر شیخ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اسکی 15سالہ بیٹی کو 22اپریل کو معصوم پیرزادہ ولد سفو پیرزادہ نے فاروق لون،مقبول اور اکابر شاہ کے ہمراہ زبردستی اغواکرلیا بچی کو دارا دھمکا کر اور لالچ دے کر مظفرآباد عدالت میں انصر پیرزادہ کے بھتیجے کے زریعے عدالت میں جعلی کزن اکابر شاہ کے زریعے بیان دلوایا میرے والدین ظلم کرتے ہیں معصوم پیرزادہ نے عدالت کو بتایا کہ وہ لڑکی کو مدرسہ میں داخل کروادے گا ہمیں جب علم ہوا تو ہم انصر پیرزادہ کے گھر مظفرآباد پہنچے جہاں پہلے ہمیں 4گھنٹے باہر ریت کے ڈھیر پر بٹھائے رکھا اور پھر ہمیں زلیل کر کے گھر سے نکال دیا اور کہا کہ جاؤ مجھے نہیں پتا کہ ہم دو دن سے دربدر بچی کی تلاش میں مارے پھر رہے ہیں مگر کوئی شنوائی نہیں ہوئی انہوں نے وزیر اعظم آزاد کشمیر،انسپکٹر جنرل پولیس سے اپیل کی ہے کہ ہماری بچی کی بازیابی کے لیے اقدامات کے جائیں اور بچی کے اغواء میں ملوث ملزمان کو گرفتا کر کے قرار واقعی سزا دی جائے۔

متعلقہ عنوان :