قصور میں امام مسجد سمیت 4 افراد کی 2 بچوں سے زیادتی

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین جمعہ مئی 12:41

قصور میں امام مسجد سمیت 4 افراد کی 2 بچوں سے زیادتی
قصور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 04 مئی 2018ء) : قصور میں امام مسجد سمیت 4 افراد نے دو بچوں جو جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق جامعہ مسجد انصاف سٹی فیز ون ہلہ روڈ میں 10 سالہ بچہ سپارہ پڑھنے گیا تو امام مسجد اسے زبردستی اپنے حُجرے میں لے گیا۔ قصور کے محنت کش صفدر علی کا دس سالہ بچہ تعلیم حاصل کرنے کی غرض سے جامعہ مسجد گیا جہاں کے پیش امام ظہور احمد نے بچے کو پکڑا اور زبردستی اپنے حُجرے میں لے گیا۔

(جاری ہے)

ملزم نے بچے کو جنسی درندگی کا نشانہ بنایا جس پر بچے نے چیخ و پُکار کی تو مسجد کے اطراف میں موجود لوگوں نے دروازہ توڑ کر بچے کو درندے سے نجات دلوائی۔ ملزم موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا۔ دوسری جانب ساندہ پھاٹک کے قریب 6 سالہ بچہ سفیان عمر گلی میں کھیل رہا تھا ، ملزم علی عثمان بچے کو اغوا کر کے لے گئے اور حالت غیر میں چھوڑ کر فرار ہو گئے۔ بچے کے والد عمر نے پولیس کو بتایا کہ ملزمان میرے بچے کو جنسی درندگی کا نشانہ بنانے کے بعد خون میں لت پت چھوڑ کر فرار ہو گئے جسے طبی امداد کے لیے ڈی ایچ کیو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ پولیس نے ملزمان کے خلاف مقدمات درج کر کے تلاش شروع کر دی ہے۔

متعلقہ عنوان :